کے سی آر کی خاندانی حکمرانی سے عوام عاجز: بنڈی سنجے

بنڈی سنجے نے کہاکہ چیف منسٹر کے وعدہ کے مطابق بے گھر غریبوں کو ڈبل بیڈروم کے مکانات فراہم نہیں کئے جارہے ہیں۔ کے سی آر نے بیروزگار نوجوانوں کو بیروزگاری بھتہ دینے کا وعدہ کوفراموش کردیا ہے۔

حیدرآباد: صدر ریاستی بی جے پی ورکن پارلیمنٹ بنڈی سنجے کمار نے آج دعویٰ کیا کہ ریاست کے عوام، چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی خاندانی حکمرانی، ان کے کرپشن اور آمرانہ طرز حکومت سے عاجز آچکے ہیں۔ انہوں نے پارٹی کارکنوں پر زور دیا کہ وہ ٹی آر ایس کی غلط حکمرانی کے خلاف اٹھ کڑھے ہوں اور باقاعدہ طور پر احتجاج درج کرائیں۔ شہر میں منعقدہ پارٹی کے تربیتی کیمپ سے خطاب کرتے ہوئے بنڈی سنجے نے یہ بات کہی۔

انہوں نے کہا کہ ریاست کے عوام بالخصوص غریب، حکومت سے تنگ آچکے ہیں۔ ریاست کی موجودہ ٹی آر ایس حکومت، غریب خاندانوں کو نئے آسرا وظائف منظور کررہی ہے اور غریب مریض، کارپوریٹ ہاسپٹلس میں اپنا بہتر علاج کرانے سے قاصر ہیں۔ حکومت کی جانب سے بقایہ جات کی عدم ادائیگی کے سبب خانگی ہاسپٹلس میں غریبوں کا علاج کرنے سے انکار کیا جارہا ہے۔ چیف منسٹر کے وعدہ کے مطابق بے گھر غریبوں کو ڈبل بیڈروم کے مکانات فراہم نہیں کئے جارہے ہیں۔ کے سی آر نے بیروزگار نوجوانوں کو بیروزگاری بھتہ دینے کا وعدہ کوفراموش کردیا ہے۔

 ریاست کے مختلف سرکاری محکموں میں دو لاکھ سے زیادہ جائیدادیں مخلوعہ رہنے کے باوجود، تقررات نہیں کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ ریاست میں کرپشن کا چلن عام ہوگیا ہے۔ متحدہ ریاست اے پی سے تقابل کیا جائے تو تلنگانہ میں کرپشن میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے۔

ریاست کے عوام خود کو غیر محفوظ سمجھنے لگے ہیں۔ کریم نگر کے ایم پی بنڈی سنجے نے کہا کہ بی جے پی واحد پارٹی ہے تو ریاست میں ٹی آر ایس کا حقیقی متبادل بن سکتی ہے۔ انہوں نے پارٹی کارکنوں پر زور دیا کہ وہ ٹی آر ایس حکومت کی ناقص پالیسیوں سے عوام کو واقف کرائیں۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.