حیدرآباد عصمت ریزی اور قتل کیس‘ملزم کی خودکشی

تلنگانہ کے ڈی جی پی مہیندر ریڈی نے ملزم کی خودکشی کی توثیق کی۔ انہوں نے اپنے ٹوئیٹرہینڈل سے اس خصوص میں تصاویرکو پوسٹ کیا اور کہا کہ اسٹیشن گھن پور میں ملزم ٹرین کی پٹریوں پر مردہ پایاگیا۔

حیدرآباد: شہر حیدرآباد کے سعیدآباد علاقہ کی 6سالہ لڑکی کی عصمت ریزی اور قتل کے اہم ملزم پی راجو نے ورنگل کے نشکال میں ٹرین کے سامنے چھلانگ لگا کرخودکشی کرلی۔ اس عصمت ریزی کے واقعہ کے بعد پولیس اس کو بڑے پیمانہ پر تلاش کررہی تھی۔ پولیس کو ٹرین کی پٹریوں پر نعش ملی جس کی شناخت اس کے ہاتھ پر بنے ہوئے ٹیٹو کے ذریعہ کی گئی۔

گذشتہ جمعرات کو اس واقعہ کے بعد سے راجو فرارتھا۔اس کا پتہ بتانے والے کو10لاکھ کا انعام کا بھی پولیس نے اعلان کیا تھا۔ساتھ ہی اس کے پوسٹرس بڑے پیمانہ پرلگائے گئے تھے۔

تلنگانہ کے ڈی جی پی مہیندر ریڈی نے ملزم کی خودکشی کی توثیق کی۔ انہوں نے اپنے ٹوئیٹرہینڈل سے اس خصوص میں تصاویرکو پوسٹ کیا اور کہا کہ اسٹیشن گھن پور میں ملزم ٹرین کی پٹریوں پر مردہ پایاگیا۔ مہلوک کے جسم پر شناخت کے نشان سے اس کی پہچان کی گئی۔

کمشنر پولیس ورنگل ترون جوشی نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ضلع پولیس دو تا تین دنوں سے اس ملزم کی تلاش کررہی تھی تاہم آج صبح تقریبا8.45بجے وہ پٹریوں پر چل رہا تھا تاہم گینگ مین نے اس کو دیکھ کر اس سے خواہش کی کہ وہ پٹری پر سے ہٹ جائے تاہم اس نے ایسا نہیں کیااور اسی وقت کونارک ایکسپریس ٹرین نے اس کو ٹکر دے دی جس کے نتیجہ میں وہ ہلاک ہوگیا۔

طریقہ کار کے مطابق پہلے اس بات کی اطلاع ریلوے پولیس کو دی گئی۔ بعد ازاں 9.50بجے ضلع پولیس کو اس بات کی اطلاع دی گئی جس پر اسٹیشن گھن پور سے پولیس عہدیدار وہاں پہنچے۔ اس کے ہاتھوں کے ٹیٹو کے ذریعہ اس کی شناخت کی گئی اور اس کے خاندان کو اس بات کی اطلاع دی گئی۔

یہ واضح طورپر خودکشی کا واضح معاملہ ہے۔ ملزم یہاں کیسے پہنچا، اس بات کی جانچ کی جائے گی۔ اس کی نعش کو پوسٹ مارٹم کے لئے ایم جی ایم اسپتال ورنگل منتقل کیاگیا ہے۔اس کے ارکان خاندان کو اطلاع دی گئی ہے جو اسپتال پہنچ رہے ہیں۔ پوسٹ مارٹم کے بعد نعش کو ان کے حوالے کردیاجائے گااور اس معاملہ کی جانچ کی جائے گی۔اس کی تلاش کے لئے پولیس سرگرم تھی۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.