دلت بندھو اسکیم پر عمل آوری کا پیر کو جائزہ اجلاس

اجلاس میں اضلاع کھمم، نلگنڈہ، محبوب نگر اور نظام آباد کے وزراء، صدر نشین ضلع پریشد، ضلع کلکٹرس، حلقہ اسمبلی مدھیرا، تنگا ترتی، اچم پیٹ اور جکل کے اراکین اسمبلی شرکت کریں گے۔

حیدرآباد: چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اختراعی اسکیم دلت بندھو پر عمل آوری کا 13 ستمبر کو جائزہ لیں گے۔

انہوں نے اس سلسلہ میں پیر کو پرگتی بھون میں 2:30 بجے دن اعلیٰ سطحی اجلاس طلب کیا ہے۔

اس اجلاس میں اضلاع کھمم، نلگنڈہ، محبوب نگر اور نظام آباد کے وزراء، صدر نشین ضلع پریشد، ضلع کلکٹرس، حلقہ اسمبلی مدھیرا، تنگا ترتی، اچم پیٹ اور جکل کے اراکین اسمبلی شرکت کریں گے۔

حکومت کی جانب سے حضور آباد کے ساتھ ساتھ مزید چار منڈلوں میں دلت بندھو اسکیم پر عمل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ریاست کے چاروں سمت (شمال۔ جنوب۔ مشرقی۔ مغرب) سے ایک ایک  ایس سی حلقہ اسمبلیوں میں سے چار منڈلوں کا انتخاب کرتے ہوئے ان منڈلوں کے تمام ایس سی خاندانوں کو دلت بندھو اسکیم کے تحت مالی مدد فراہم کی جائے گی۔

 ضلع کھمم کے حلقہ اسمبلی مدھیرا کے چنتا کانی منڈل، سوریا پیٹ ضلع کے تنگاترتی اسمبلی حلقہ کے تروملگری منڈل، ضلع ناگر کرنول کے اچم پیٹ اسمبلی حلقہ کے چارا گنڈہ منڈل اور ضلع کاماریڈی کے جکل اسمبلی حلقہ کے نظام ساگر منڈ ل کا دلت بندھو اسکیم پر عمل آوری کیلئے انتخاب عمل میں لایا گیا ہے۔

دوسری طرف حکومت نے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راو کے اڈاپٹ کردہ دیہات واسالا مری کے 66دلت افراد کے بینک اکاونٹس میں دلت بندھو اسکیم کے تحت 6.6 کروڑ روپے جمع کرا دئیے گئے ہیں جس سے وہاں کے دلت عوام میں مسرت کی لہر دوڑ گئی۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.