راجندر نگر میں فرانسیسی خاتون کا قتل

 قتل کے سلسلہ میں مرحومہ کی گود لی ہوئی بیٹی روما (24 سالہ)، اس کے پارٹنر وکرم سری رامولا (25) اوراس کے دوست راہول گوتم (24) کو گرفتار کرلیا۔

حیدرآباد: سائبر آباد پولیس نے معمرفرانسیسی خاتون کے قتل میں ملوث تین ملزمین کو آج گرفتار کرلیا۔

ڈی سی پی شمس آباد این پرکاش ریڈی کے بموجب حیدرآباد میں مقیم معمر 68 سالہ فرانسیسی نژاد خاتون میری کرسٹائن کا قتل اس کی متبنیٰ بیٹی اور اس کے غیر ازدواجی پارٹنرنے  خاتون دو دنوں سے غائب تھی جس کی لاش ہفتہ کی صبح حیدرآباد کے مضافات حمایت ساگر کے قریب  برآمد ہوئی۔

شام تک سائبرآباد پولیس نے اعلان کیا کہ تین ملزمین کی گرفتاری عمل میں لاتے ہوئے اس نے قتل کا معمہ سلجھالیا ہے۔

 قتل کے سلسلہ میں مرحومہ کی گود لی ہوئی بیٹی روما (24 سالہ)، اس کے لیو ان پارٹنر وکرم سری رامولا (25) اوراس کے دوست راہول گوتم (24) کو گرفتار کرلیا۔

پرکاش ریڈی نے بتایا کہ ملزمین نے جائیداد کے لئے یہ قتل کیا۔ انہوں نے بتایا کہ راجندر نگر پولیس اسٹیشن کو 9 ستمبر کی شب کرسٹائن کے منہ بولے داماد پرشانت کی ایک شکایت موصول ہوئی کہ وہ صبح سے لاپتہ ہے۔

پولیس نے مقدمہ درج کرتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کردیا۔ خاندان کے لوگوں نے چونکہ روما پر شبہ ظاہر کیا تھا اس لئے پولیس نے اس کی تفتیش شروع کی جس میں اس نے اقبال جرم کرلیا۔

تحقیقات میں یہ انکشاف ہوا کہ وکرم اور اہول نے خاتون کی رہائش گاہ واقع درگاہ خلیج خان، گنڈی پیٹ منڈل میں 8 ستمبر کو رسی گلا گھونٹ کرقتل کردیا۔

انہوں نے بعد میں لاش کو ایک کار میں منتقل کرتے ہوئے حمایت ساگر ذخیرہ آب کے قریب جھاڑیوں میں پھینک دیا۔

کرسٹائن جنہوں نے 30 برس بھارت کو نقل مکانی کی تھی اور یہیں مقیم ہوگئی تھیں،غریب اور یتیم بچوں کی خدمت کی غرض سے ٹولی چوکی اورموضع درگاہ خلیج خان میں میں ماریکا ہائی اسکول قائم کیا تھا۔

خاتون کو دو حقیقی بیٹیاں میری سولینج اور ریبیکا ہیں۔ سولینج کی پرشانت سے شادی ہوئی تھی اور وہ سن سٹی میں مقیم تھیں جبکہ ریبیکا پڈیچری میں رہتی ہیں۔

متوفی خاتون نے روما اور پریانکا کو گود لیا تھا۔ یہ تینوں درگاہ خلیج خان میں ہی رہتے تھے۔

روما کی شادی کرنے کے لئے کرسٹائن نے کرسچئن میٹری مونی ویب سائٹ پر اس کی پروفائیل تیار کروائی تھی۔

تاہم روما نے ایک میٹری مونی ویب سائٹ کے توسط سے مئی میں وکرم سے جان پہچان بڑھالی تھی جو اننت پور ضلع، آندھرا پردیش کا ساکن ہے، تب سے وہ لکشمی نواس اپارٹمنٹ کونڈا پور میں کرایہ کے ایک گھر میں رہنے لگے تھے۔

کرسٹائن نے اس ناجائز رشتہ کو قبول نہیں کیا اور ان کی شادی کرنے سے انکار کردیا تھا۔ روما اور وکرم نے وکرم کے دوست راہول ساکن نیلور کے ساتھ مل کر کرسٹائن کو ختم کردینے اور اس کی جائیداد ہڑپ لینے کی سازش رچی۔

روما 8 ستمبر کی شام متوفی کی گھر پہنچی اور کچھ دیر تبادلہ خیال کے بعد کرسٹائن نے اپنی کار میں اسے ماریکا ہائی اسکول ٹولی چوکی چھوڑکر اپنے گھر واپس آگئی۔

جب کرسٹائن واپس لوٹی تو وکرم اور راہول اس کا باتھ روم کے قریب انتظار کرہے تھے۔ انہوں نے رسی سے اس کاگلا گھونٹ دیا۔ حمایت ساگر کے قریب لاش کو پھینک کر دونوں ملزم متوفی کی رہائش گاہ پہنچے، کارکو پارک کیا اور اس کی کار کی چابی، لیاپ ٹاپ اور آئی فون لے کر چلے گئے۔

دوسرے دن انہوں نے روما کے اکاؤنٹ میں دو لاکھ روپے منتقل کئے۔ وہ اپنی بہنوں کو گمراہ کرتی رہی تھی کہ اسے متوفی کے بارے میں کچھ علم نہیں ہے۔ پولیس نے تکنیکی طور پر شواہد کو اکٹھا کیا اور بعد تفتیش قتل کی گتھی سلجھالیتے ہوئے تینوں کو عدالتی تحویل میں دے دیا۔

کمشنر پولیس سائبرآباد اسٹیفن رویندرا، ڈی سی پی این پرکاش ریڈی اور اے سی پی راجندرنگر سنجے کمار کی نگرانی میں انسپکٹر ایس او ٹی ایس وینکٹ ریڈی اور انسپکٹر راجندرنگر کے کنکیا اور ٹیم نے تحقیقات انجام دی تھیں۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.