انیل دیشمکھ کی طرح مجھے پھنسانے کی سازش ہورہی ہے: نواب ملک

این سی پی قائد نے زور دے کر کہا کہ میرے پاس‘ سازشیوں کی ساری تفصیلات ہیں۔ میں ممبئی پولیس کمشنر اور مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ سے بھی شکایت کرنے والا ہوں کہ اچھی طرح تحقیقات کرائی جائیں اور کارروائی ہو۔

ممبئی: مہاراشٹراکے وزیر اقلیتی امور نواب ملک نے ہفتہ کے دن چونکادینے والا دعویٰ کیا کہ انہیں ”انیل دیشمکھ اسٹائل فیک کیس“ میں پھنسانے کی سازش ہورہی ہے۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ یہ سازش‘ مرکزی ایجنسیوں کے بعض عہدیداروں کی ایما پر ہورہی ہے لیکن انہوں نے ان کا نام نہیں لیا۔ میڈیا سے بات چیت میں نواب ملک نے دعویٰ کیا کہ انہوں نے مرکزی ایجنسیوں کے عہدیداروں کے بعض ای میل اور واٹس ایپ چیاٹ حاصل کرلئے ہیں جن میں لوگوں کو ”اُکسایا“ گیا ہے کہ وہ میرے خلاف جھوٹی شکایتیں درج کرائیں۔

 این سی پی قائد نے زور دے کر کہا کہ میرے پاس‘ سازشیوں کی ساری تفصیلات ہیں۔ میں ممبئی پولیس کمشنر اور مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ سے بھی شکایت کرنے والا ہوں کہ اچھی طرح تحقیقات کرائی جائیں اور کارروائی ہو۔ ریاستی وزیر نے جنہوں نے نارکوٹکس کنٹرول بیورو (این سی بی) کے زونل ڈائرکٹر سمیر وانکھیڈے کے خلاف مہم چھیڑ رکھی ہے‘ کہا کہ انہوں نے ٹھوس ثبوت اکٹھا کرلیا ہے کہ انہیں سابق وزیر داخلہ انیل دیشمکھ کی طرح جھوٹے کیس میں پھنسانے کی سازش کی جارہی ہے۔ انیل دیشمکھ اِن دنوں عدالتی تحویل میں ہیں۔

 نواب ملک نے کہا کہ گزشتہ 2 ماہ سے جب سے انہوں نے وانکھیڈے اور کروز جہاز کورڈیلیا پر 2  اکتوبر کے فرضی دھاوے کے تعلق سے سلسلہ وار انکشافات کرنے شروع کئے‘ بعض مشتبہ نامعلوم افراد ان کا اور ان کی فیملی کا پیچھا کررہے ہیں۔ نواب ملک نے کہا کہ یہ لوگ میری فیملی‘ پوتے پوتیوں / نواسے نواسیوں اور میری نقل و حرکت کے بارے میں انکوائری کررہے ہیں۔ میرے بنگلہ اور دفاتر کی تصاویر لے رہے ہیں۔ گزشتہ ہفتہ جب میں دُبئی گیا تھا یہ لوگ پھر آئے تھے لیکن میرے علاقہ کے بعض لوگوں نے ان کا تعاقب کیا کیونکہ یہ لوگ میرے بنگلہ کی تصاویر لے رہے تھے۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.