مہاراشٹرمیں علماء کیلئے ماہانہ سرکاری وظیفہ جاری کرنے کا مطالبہ: ڈاکٹر پرکاش امبیڈکر

کل شام ممبئی کے دادر علاقہ میں ڈاکٹر امبیڈکر بھون میں منعقدہ سمیلن اور کھلا سنواد کے دوران مختلف قراردادیں منظور کی گئیں۔

ممبئی : مہاراشٹرا وقف بورڈ سے رجسٹرڈ سبھی مساجد، مدارس اور ادارے کے علماء کے لیئے ماہانہ سرکاری مالی وظیفہ جاری کرنے کا مطالبہ آئین ہند کے معمار ڈاکٹر بابا صاحب امبیڈکر کے پوتے ڈاکٹر پرکاش امبیڈکر کی قیادت والی دلت سیاسی تنظیم ونچت بہوجن اگھاڑی اور معاون تنظیموں نے پیغمبر ﷺبل کی حمایت میں منعقدہ ایک کانفرنس کے دوران کیا۔

کل شام ممبئی کے دادر علاقہ میں ڈاکٹر امبیڈکر بھون میں منعقدہ سمیلن اور کھلا سنواد کے دوران مختلف قراردادیں منظور کی گئیں۔

جس کے مطابق پیغمبر محمدﷺ اور دیگر مذہبی رہنماوں کی بے حرمتی کی روک تھام ایکٹ یعنی "پیغمبر محمد ﷺ بل کی ملک کے سبھی ریاستی اسمبلیوں اور پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں میں منظوری کا مطالبہ کیا گیا اور اس بل کی منظوری کے لیے اپنے میونسپل وارڈ اور حلقہ کے سبھی سیاسی پارٹیوں کے ممبر کارپوریشن نگر سیوک، ممبر اسمبلی اور ممبر پارلیمنٹ سے تحریری مطالبہ کیئے جانے کی قرارداد منظور کی گئی۔

اسی طرح سے مارچ 2019 سے اکتوبر 2021 کے درمیان مکمل اور جزوی طور پر لاگو کردہ کورونا لاک ڈاون کے سبب سخت مالی مشکلات سے مذہبی اداروں میں خدمات انجام دینے والے مذہبی رہنماوں کو ضلع کلکٹر کے ذریعے میونسپل وارڈ سطح پر فوری سروے کرکے حکومت مہاراشٹرا کی جانب سے بلا تفریق مالی راحتی پیکج دیئے جانے کا مطالبہ کیا گیا اور اس قرارداد کو بھی منظوری دی گئی جس کے تحت ملک کی دوسری ریاستوں کی طرز پر مہاراشٹرا وقف بورڈ کی جانب سے اپنے رجسٹرڈ شدہ سبھی چھوٹے بڑے اداروں میں سن 2020 سے قبل سے خدمات انجام دے رہے ائمہ، موذن،حفاظ اور مدرسین کے لیے ماہانہ سرکاری مالی وظیفہ شروع کیا جائے۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.