نیشنل ڈیفنس اکیڈیمی کی 141 ویں پاسنگ آؤٹ پریڈ

نروانے، نے کہا کہ خواتین کی شمولیت انہیں بااختیار بنائے گی اور کم از کم 40سال کے بعد وہ اسی مقام پر کھڑی ہوں گی جہاں آج وہ کھڑے ہیں۔

پونے: ہندوستانی فوج کے سربراہ جنرل ایم ایم نروانے نے کہا کہ نیشنل ڈیفنس اکیڈیمی (این ڈی اے) نے خاتون کیڈٹس کیلئے اپنے دروازے کھول دیئے اور توقع کی جاتی ہے کہ مساوی موقع اور پیشہ واریت کے اسی جذبہ کے ساتھ ان کا خیرمقدم کیا جائے گا۔ ان کی شمولیت مسلح افواج میں ”صنفی مساوات“ کی سمت پہلا قدم ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ خواتین کی شمولیت انہیں بااختیار بنائے گی اور کم از کم 40سال کے بعد وہ اسی مقام پر کھڑی ہوں گی جہاں آج وہ کھڑے ہیں۔

فوجی سربراہ نے یہاں این ڈی اے کے 141ویں کورس کی پاسنگ آؤٹ پریڈ کے موقع کے کیڈٹس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ا ب جبکہ ہم نے خاتون کیڈٹس کے ذریعہ این ڈی اے کے دروازے کھول دیے ہیں، ہم آپ سے توقع کرتے ہیں کہ ان کا ہندوستانی مسلح افواج میں اسی مساوی موقع اور پیشہ واریت کے جذبہ کے ساتھ خیرمقدم کریں گے جس کے لیے دنیا بھر میں افواج جانی جاتی تھیں۔

گزشتہ ماہ وزارت دفاع نے سپریم کورٹ کو مطلع کیا تھا کہ این ڈی اے کے داخلہ امتحان میں خاتون امیدواروں کی شرکت کے تعلق سے اعلامیہ اگلے سال مئی میں جاری ہوگا، مگر یہ کہتے ہوئے کہ این ڈی اے میں خواتین کی شمولیت کو ایک سال کے لیے موخر نہیں کیا جاسکتا عدالت عظمیٰ نے خاتون امیدواروں کو حکومت کی درخواست کے مطابق مئی 2022تک انتظار کروانے کے بجائے اسی سال نومبر میں امتحان میں شریک ہونے کی اجازت دی۔

پریڈ کے بعد میڈیا نمائندوں سے بات کرتے ہوئے جنرل نروانے نے کہا کہ خواتین کو این ڈی اے میں شامل کیا جارہا ہے، انہیں یقین ہے کہ وہ اپنے مرد ہم منصبوں سے بہتر مظاہرہ کریں گی۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.