ٹی آر ایس دور حکومت میں خواتین کیساتھ نا انصافی: اتم کمار ریڈی

اتم کماریڈی نے الزام عائد کیا کہ کانگریس دورحکومت میں خواتین پر مشتمل سیلف ہلپ گروپس قائم کئے تھے تاکہ ان گروپس کو سود سے پاک قرض فراہم کئے جاسکے۔ ٹی آر ایس کے 7 سالہ دور اقتدار میں سیلف ہلپ گروپس کی خواتین کو دھوکہ دیا گیا۔

حیدرآباد: پردیش کانگریس کے سینئر قائد ورکن پارلیمان نلگنڈہ این اتم کماریڈی نے الزام عائد کیا کہ ٹی آر ایس دورحکومت میں خواتین کے ساتھ شدید ناانصافی کی جارہی ہے۔

کل ہند کانگریس مہیلا وبھاگ کی جنرل سکریٹری فاطمہ اور صدرریاستی مہیلا کانگریس سنیتا راؤ کے علاوہ رکن اسمبلی جگاریڈی کے ساتھ آج یہاں گاندھی بھون میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے این اتم کمارریڈی نے دعویٰ کیاکہ کانگریس کے دور حکومت میں خواتین کو با اختیار وخود مکتفی بنانا اہم موضوع تھا۔

کانگریس حکومت نے خواتین پر مشتمل سیلف ہلپ گروپس قائم کئے تھے تاکہ ان گروپس کو سود سے پاک قرض فراہم کئے جاسکے۔چیف منسٹر کے چندرشیکھرراؤ پر شدید تنقید کرتے ہوئے انہوں نے الزام عائد کیا کہ ٹی آر ایس کے 7 سالہ دور اقتدار میں سیلف ہلپ گروپس کی خواتین کو دھوکہ دیا گیا۔

چیف منسٹر کے چندرشیکھرراؤ نے سیلف ہلپ گروپ کی خواتین کو ایک پیسہ جاری کیا اور نہ ہی گروپس کے قرض جات کے سود کی رقم جاری کی۔

اتم کمارریڈی نے کہاکہ حضور آباد اسمبلی حلقہ کے ضمنی الیکشن کو مد نظررکھتے ہوئے چیف منسٹر نے خواتین کے سیلف ہلپ گروپ کے ارکان کیلئے 54 کروڑ روپئے جاری کئے ہیں۔

خواتین سے متعلق کئے گئے ایک وعدہ کو بھی پورا نہ کرتے ہوئے کے چندرشیکھرراؤ نے ان خاتون ارکان سے دغابازی کی ہے۔

سابق صدر پردیش کانگریس نے چیف منسٹر کے سی آر سے مطالبہ کیا کہ پریمیم رقم کیلئے فوری 1252 کروڑ روپئے جاری کریں اور سیلف ہلپ گروپ کی خواتین کے ابھئے ہستم انشورنس اسکیم کا احیاء کریں۔

(منصف نیوز بیورو)

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.