بٹ کوائن اسکینڈل کا اصل ملزم دوبارہ گرفتار

ایک جھگڑے کے سلسلہ میں ہفتہ کے دن جے بی نگر پولیس ایک فائیواسٹارہوٹل سے سریکی کو ایک مشہورجوہری کے بیٹے وشنو بھٹ کے ساتھ گرفتارکی۔

بنگلورو: بٹ کوائن فراڈ جس سے سیاسی حلقوں میں برہمی پیدا ہوئی اور کرناٹک میں حکمراں بی جے پی اور اپوزیشن کانگریس لیڈروں کے مابین تنازعہ پیدا ہوا اب نیا موڑ لیا جب اصل ملزم سری کرشنا عرف سریکی کو دوبارہ گرفتارکیاگیا۔

ایک جھگڑے کے سلسلہ میں ہفتہ کے دن جے بی نگر پولیس ایک فائیواسٹارہوٹل سے سریکی کو ایک مشہورجوہری کے بیٹے وشنو بھٹ کے ساتھ گرفتارکی۔

اڈیشنل کمشنر آف پولیس مروگن اور ڈی سی پی ایس ڈی شرنپا نے سریکی سے پوچھ تاچھ کی۔ ضمانت پر رہائی کے بعد سریکی ایک ماہ سے زیادہ عرصہ سے فائیواسٹار ہوٹل میں مقیم تھا۔ پولیس اس کے قبضہ سے ایک لیاپ ٹاپ اور ایک ٹیبلٹ برآمد کی۔

بعدپوچھ تاچھ کے بعد رات میں اسے گرفتارکیاگیا۔ یہ واقعہ بٹ کوائن فراڈ کیس میں ایک بڑی تبدیلی کی طرح دیکھاجارہا ہے کیونکہ کانگریس پیسہ بنانے کے لئے حکمراں بی جے پی لیڈروں اور ملزم سریکی کے مابین گٹھ جوڑ کا الزام عائد کررہی ہے۔

کانگریس چیف منسٹر بسواراج بومائی سے مطالبہ کررہی ہے کہ بٹ کوائن اسکینڈل کو انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ (ای ڈی) کو منتقل کرنے کے مکتوبات جاری کریں۔ تاہم اس بارے میں کوئی بیان جاری نہیں کیا۔ ذرائع نے وضاحت کی ہے کہ کرناٹک کے ذی اثر سیاسی آقا ریاستی اور مرکزی ایجنسیوں کے ذریعہ تحقیقات میں حائل ہورہے ہیں۔

تاہم اس تعلق سے شکایت وزیراعظم کے دفتر(پی ایم او) تک پہنچ گئی ہے جسے وہاں سنجیدگی سے لیاگیا ہے جس سے حکمراں بی جے پی پرہرممکنہ حملے شروع کرنے کانگریس کی تیاری کررہی ہے۔ ایسے وقت اسکام کے اصل ملزم کی گرفتاری ایک اہم موڑدکھائی دے رہا ہے۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.