13ماہ کی لاپتہ لڑکی کی نعش دستیاب

اس چھوٹی لڑکی کے والدین جو کچرا چنتے ہیں‘ اتوار کی صبح اپنی لڑکی کو پڑوسی کے گھر چھوڑ کر کچرا چننے کیلئے گئے ہوئے تھے جب شام میں وہ واپس ہوئے تو ان کی لڑکی وہاں نہیں تھی اس کے بعد والدین نے اس سلسلہ میں پولیس میں شکایت درج کرائی۔

حیدرآباد: ایک 13ماہ کی چھوٹی بچی جو اتوار سے لاپتہ بتائی گئی‘ کی نعش میاں پور علاقہ میں مشتبہ حالت میں دستیاب ہوئی ہے۔ پیر کے روز پولیس نے یہ بات بتائی۔

اومکارنگر میں لڑکی کے مکان کے قریب ایک کھلے مقام پر اس کی نعش دستیاب ہوئی۔ یہ علاقہ‘ پولیس کمشنریٹ سائبر آباد کے میاں پور پولیس اسٹیشن کے تحت آتا ہے۔

اس چھوٹی لڑکی کے والدین جو کچرا چنتے ہیں‘ اتوار کی صبح اپنی لڑکی کو پڑوسی کے گھر چھوڑ کر کچرا چننے کیلئے گئے ہوئے تھے جب شام میں وہ واپس ہوئے تو ان کی لڑکی وہاں نہیں تھی اس کے بعد والدین نے اس سلسلہ میں پولیس میں شکایت درج کرائی۔

پولیس اور افراد خاندان نے نصف رات تک پورے علاقہ میں لڑکی کو تلاش کیا لیکن اس کا پتہ نہیں چلا۔ لڑکی کی دادی کو مکان کے قریب کھلی اراضی پر اپنی پوتری کی نعش دکھائی دی۔

میاں پور کے انسپکٹر ایس وینکٹیش نے بتایا کہ شیر خوار لڑکی کے جسم پر ڈوبنے جیسی علامتیں یا نشان پائے گئے۔

پولیس عہدیدار نے بتایا کہ ہم اس بات کی تحقیقات کر رہے ہیں کہ لڑکی کو کیسے اور کہاں ڈبویا گیا ہے یا کسی نے کسی اور مقام پر ہلاک کرنے کے بعد لڑکی کی نعش کو کھلے مقام پر پھینک دیا ہو۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.