یو اے ای میں نفرت انگیز تقریر کے الزام میں جرنلسٹ کو حراست میں لینے کا حکم

متحدہ عرب امارات اور عراق کی قومی ٹیموں کے درمیان میچ کو ابوظبی اسپورٹس چینل پر نشر ہونے سے پہلے کوریج کرتے ہوئے، ملزمان پر غیرقانونی طرزعمل کے بیان جاری کرنے کا الزام عائد کیا گیاتھا۔

دبئی: متحدہ عرب امارات میں میڈیا کے ایک رکن کو حکام نے نفرت انگیز تقاریر اور عوامی اخلاقیات کی خلاف ورزی کے الزام میں حراست میں لیاہے جو متحدہ عرب امارات اور عراق کے درمیان فٹبال میچ کی کوریج کررہاتھا۔

رپورٹس کے مطابق متحدہ عرب امارات کے پبلک فیڈرل پراسیکیوشن برائے سائبر سیکوریٹی کرائمس نے میڈیا کے رکن کو حراست میں لینے اور تحقیقات کے بعد دیگر کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیاہے۔

وامس نے کہاکہ متحدہ عرب امارات اور عراق کی قومی ٹیموں کے درمیان میچ کو ابوظبی اسپورٹس چینل پر نشر ہونے سے پہلے کوریج کرتے ہوئے، ملزمان پر غیرقانونی طرزعمل کے بیان جاری کرنے کا الزام عائد کیا گیاتھا۔

استغاثہ نے کہاکہ یہ عوامی اخلاقیات کی خلاف ورزی ہے جس سے عوامی مفاد کو نقصان پہنچے گا اور نفرت انگیز تقریر پر اکسائے گا۔ وام نے کہاکہ ان الزامات میں 5 سال تک کی قید اور 136,000 ڈالر جرمانہ ہوسکتاہے۔ پبلک پراسیکیوشن کو ابوظبی میڈیا کی جانب سے مذکورہ 2 اور تیسرے نامعلوم شخص کے خلاف شکایت موصول ہوئی۔

آن لائن گردش کردہ ایک آڈیو اور ویڈیو کلپ میں ملزم کو گفتگو کا تبادلہ کرتے ہوئے دکھایا گیا جبکہ ابوظبی اسپورٹس چینل پر براہ راست نشریات سے قبل تکنیکی آلات کی جانچ کی جارہی تھی اور میچ سے پہلے تجزیاتی اسٹوڈیو میں ایسے الفاظ اور جملے بولے گئے جو ’عوامی مفاد کو نقصان پہنچائیں گے‘ تجزیاتی اسٹوڈیو کی ٹیلی ویژن پروڈکشن گاڑی سے ٹی وی بلڈنگ میں براڈکاسٹ ریسیپشن یونٹ کو بھیجی گئی نشریات کو ہیک کرلیاگیا اور شائع شدہ کلپس کو ضبط کرلیا گیا اور انٹرنیٹ پر کچھ سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر نشر کیاگیا۔

پبلک پراسیکیوشن کے ملزمان سے تفتیش شروع کرنے اور فیصلہ لینے کے بعد اس نے ابوظبی اسپورٹس چینل اور پروگراموں کے ذمہ داروں کو طلب کیا اور تفتیش مکمل کی۔ پبلک پراسیکیوشن نے ذمہ دار تکنیکی حکام سے کہاکہ وہ اس بات کا تعین کریں کہ ہیکنگ کیسے ہوئی اور کس نے کی۔ انہوں نے ان افراد کی گرفتاری اور استعمال شدہ آلات کو ضبط کرنے کا حکم دیا اور واقعہ کی تحقیقات شروع کی۔

ابوظبی میڈیا نے میڈیا کوڈ آف آنر، پیشہ کی اخلاقیات اور ان کی ملازمتوں کی خلاف ورزی کرنے پر 3 افراد کی خدمات کو تادیبی اقدام کے طورپر ختم کردیا۔ پبلک پراسیکیوٹر تحقیقات کی پیروی کررہا ہے۔ اگرچہ ابھی مزید معلومات جاری نہیں کی گئی ہیں، ایسا لگتاہے کہ یہ بیان اس ماہ کے شروع میں مشرق وسطیٰ کے 2 ممالک کے مابین ہونے والے ایک میاچ کا حوالہ دیتاہے۔ متحدہ عرب امارات نے 2022 ورلڈکپ کوالیفائنگ مہم کے تیسرے مرحلہ میں 12 اکتوبر کو دبئی کے اسٹیڈیم میں عراق کا مقابلہ کیاتھا۔

ذریعہ
ایجنسیز

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.