18 سالہ ایما راڈو کانو نے یو ایس اوپن جیت لیا

اٹھارہ برس کی ایما راڈو کانو چوالیس سال میں یو ایس اوپن جیتنے والی پہلی برطانوی کھلاڑی ہیں۔حیرت انگیز بات یہ ہے کہ فاتح ریڈوکانو امریکہ آئیں تو انھوں نے کوالیفائنگ راؤنڈ کے بعد ہی اپنی واپسی کی ٹکٹ بک کروا لی تھیں۔

نیویارک: برطانیہ کی 18 سالہ ایما راڈو کانو نے یو ایس اوپن جیت لیا ہے۔ ویمنس سنگلز کا فائنل پہلی بار 2 کمسن کھلاڑیوں کے درمیان کھیلا گیا جس میں راڈو کانو نے کینیڈا کی19سالہ لیلیٰ فرنانڈیز کو راست سیٹوں میں چھ، چار، تین چھ سے شکست دی۔

اٹھارہ برس کی ایما راڈو کانو چوالیس سال میں یو ایس اوپن جیتنے والی پہلی برطانوی کھلاڑی ہیں۔حیرت انگیز بات یہ ہے کہ فاتح ریڈوکانو امریکہ آئیں تو انھوں نے کوالیفائنگ راؤنڈ کے بعد ہی اپنی واپسی کی ٹکٹ بک کروا لی تھیں۔

اس کی وجہ یہ تھی کہ انھیں ٹورنمنٹ کے فائنل مرحلے میں کوالیفائی کرنے کی امید ہی نہیں تھی۔ انھوں نے بغیر کوئی سیٹ ہارے ایک کے بعد ایک میچ جیتنے شروع کیے اور وہ کر دکھایا جس کے بارے میں شاید انھوں نے خود بھی کبھی نہیں سوچا تھا۔

انھوں نے کوالیفائنگ مرحلے کے تین اور فائنل مرحلے کے سات میچ جیت کر ٹائٹل اپنے نام کیا۔وہ پہلی ’کوالیفائر‘ جس نے کسی گرانڈ سلائم کوجیتاہے۔

وہ کوئی گرانڈ سلائم جیتنے والی سب سے کم عمر برطانوی کھلاڑی ہیں جبکہ ماریا شراپووا کے بعد وہ عالمی سطح پر سب سے کم عمر گرانڈ سلام جیتنے والی کھلاڑی بنی ہیں۔وہ 2014 میں سیرینا ولیمس کے بعد کوئی بھی سیٹ گنوائے بغیر سنگل ٹائٹل جیتنے والی پہلی خاتون کھلاڑی بھی بن گئی ہیں۔

انھیں اس جیت سے 18 لاکھ پاؤنڈ کی انعامی رقم ملی ہے اور خواتین کی عالمی درجہ بندی میں اب وہ 23 ویں نمبر پر آ گئی ہیں ملکہ الزبتھ دوم نے 44 سال میں یو ایس اوپن جیتنے والی پہلی برطانوی کھلاڑی ایما راڈو کانو کو مبارکباد دی ہے۔

ملکہ الزبتھ دوم کی جانب سے سوشل میڈیا پر موجود شاہی محل کے آفیشل اکاونٹس پر یو ایس اوپن جیت کر شاندار کامیابی حاصل کرنے والی برطانیہ کی ایما راڈو کانو کو مبارکباد دی گئی ہے۔ ایما راڈو کانو کی ناقابلِ یقین کامیابی کی تعریف کرتے ہوئے انہوں نے لکھاکہ اتنی چھوٹی عمر میں یہ ایک قابل ذکر کامیابی ہے اور یہ آپ کی محنت اور لگن کا ثبوت ہے۔

ذریعہ
اے ایف پی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.