اسرائیلی کی غزہ پر فضائی بمباری، دو عمارتیں مکمل تباہ

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اسرائیلی طیاروں نے غزہ میں ایک بار پھر بمباری کی، فضائی حملے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا تاہم دو عمارتیں مکمل طور پر تباہ ہوگئیں جن کے بارے میں اسرائیلی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ حماس کے ٹریننگ سنٹر تھے۔

 غزہ: اسرائیل کے جنگی طیاروں نے غزہ پر فضائی بمباری کی ہے جس میں دو عمارتوں کو مکمل طور پر تباہ کردیا گیا تاہم کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اسرائیلی طیاروں نے غزہ میں ایک بار پھر بمباری کی، فضائی حملے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا تاہم دو عمارتیں مکمل طور پر تباہ ہوگئیں جن کے بارے میں اسرائیلی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ حماس کے ٹریننگ سنٹر تھے۔

اسرائیلی فضائیہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ غزہ کے علاقے سے اسرائیلی سرزمین پر راکٹ حملے کیے گئے جس کے جواب میں فضائی کارروائی کی اور حماس کے ٹریننگ سنٹر کو تباہ کردیا۔

اسرائیل غزہ پر حملے کا جواز ہمیشہ سے حماس کے آتش گیر غباروں یا پھر راکٹ حملوں کو قرار دیتا آیا ہے تاہم وہ اپنے دعوے کے شواہد پیش کرنے میں ناکام رہا ہے۔

رواں ہفتے کے آغاز میں اسرائیلی جیل سے کموڈ کے راستے سرنگ بناکر فلسطینی رہنماوؤں کے نکلنے کے بعد سے اسرائیلی فورسز میں غصہ پایا جاتا ہے جس کا اظہار فضائی حملے کرکے کیا گیا۔

واضح رہے کہ رواں برس مئی میں غزہ کی پٹی پر اسرائیل کی 11 روز کی مسلسل بمباری کے بعد حماس اور اسرائیل کے درمیان مصر کی ثالثی میں جنگ بندی ہوگئی تھی۔

اسرائیلی فوج نے بتایا کہ جنگی طیاروں سے کیے جانے والے یہ حملے آج اتوار کے روز کیے گئے۔

اسرائیل اور فلسطینیوں کے مابین کشیدگی گزشتہ ہفتے اس وقت سے کافی زیادہ ہو چکی ہے، جب پیر کے دن ایک ہائی سکیورٹی اسرائیلی جیل سے چھ عسکریت پسند فلسطینی قیدی فرار ہو گئے تھے۔ اب تک ان میں سے چار دوبارہ گرفتار کیے جا چکے ہیں۔

ذریعہ
ایجنسیز

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.