امریکہ دوحہ معاہدہ کی خلاف ورزی کا مرتکب: ذبیح اللہ مجاہد

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے سلسلہ وار ٹویٹس میں کہا، ”بلیک لسٹ“ پر امریکی موقف دوحہ معاہدے کی خلاف ورزی ہے۔

کابل: طالبان نے جمعرات کو کہا کہ اس کے رہنماؤں کو بلیک لسٹ میں ڈالنے  کا امریکی موقف دوحہ معاہدے کی خلاف ورزی ہے۔

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے سلسلہ وار ٹویٹس میں کہا، ”بلیک لسٹ“ پر امریکی موقف دوحہ معاہدے کی خلاف ورزی ہے۔

پینٹاگان کا کہنا ہے کہ امارت اسلامیہ کی کابینہ کے کچھ ارکان یا حقانی نیٹ ورک کے ارکان امریکی بلیک لسٹ میں ہیں اور انہیں نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

مجاہد نے مزید کہا، امارت اسلامیہ اس صورت حال کو دوحہ معاہدے کی واضح خلاف ورزی سمجھتی ہے، جو امریکہ یا افغانستان کے مفاد میں نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ حقانی کا خاندان امارت اسلامیہ کا حصہ ہے اور اس کا کوئی الگ نام اور تنظیم نہیں ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ امریکہ یا دیگر ممالک اشتعال انگیز خیالات کا اظہار کر رہے ہیں اور افغانستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کی کوشش کر رہے ہیں۔

ذبیح اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ نئی افغان حکومت کی وزارت خارجہ بحال ہوگئی ہے، ہم دنیا سے تعلقات استوار کریں گے۔انہوں نے عالمی برادری سے اپیل کی کہ افغانستان ایک مشکل صورتحال سے دوچار ہے، دنیا ہماری مدد کرے اور ہماری حکومت کو تسلیم کرے۔

انہوں نے امدادی طیارہ روانہ کرنے پر پاکستان کا شکریہ ادا کیا۔ ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ پنچ شیر پر ہم نے کنٹرول حاصل کرلیا ہے اور لڑائی ختم ہوچکی ہے۔

ذریعہ
اے ایف پی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.