کابل میں ناروے کے سفارت خانہ میں شراب کی بوتلیں تباہ

سفارت خانہ کے اندر سے طالبان ملیشیا کی ایک تصویر پوسٹ کرتے ہوئے سفیر نے ٹویٹ کیا کہ طالبان نے ناروے کے سفارت خانہ پر قبضہ کرلیا ہے۔

کابل: طالبان ملیشیا کے بندوق برداروں نے کابل میں ناروے کے سفارت خانہ پر قبضہ کرلیا اور شراب کی بوتلوں اور بچوں کی کتابوں کو تباہ کردیا۔ ناروے کے سفیر سگوالد ہیگ نے یہ بات بتائی۔

سفارت خانہ کے اندر سے طالبان ملیشیا کی ایک تصویر پوسٹ کرتے ہوئے سفیر نے ٹویٹ کیا کہ طالبان نے ناروے کے سفارت خانہ پر قبضہ کرلیا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ وہ اسے بعد میں ہمیں واپس کریں گے لیکن پہلے شراب کی بوتلوں کو توڑنا اور بچوں کی کتابوں کو تباہ کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بظاہر بندوقیں کم خطرناک ہیں۔

 یہ تصویر ناروے کے سب سے بڑے اخبار آفٹن پوسٹن کی ہے۔ اخبار نے اپنی ویب سائٹ پر داڑھی رکھے ہوئے اور پگڑی باندھے ہوئے طالبان ملیشیا کو بچوں کی کتابیں پھاڑتے ہوئے دکھایا ہے۔

 اس نے کہا ہے کہ طالبان کے 56  ارکان کابل میں ناروے کے چھوٹے سے قطعہ اراضی میں داخل ہوگئے۔ ٹویٹر پر ایک پوسٹ میں کہا گیا کہ کابل میں ناروے کے سفارت خانہ میں طالبان کے داخل ہونے کی اطلاع ملی ہے۔

سفیر کی شراب کے کلیکشن‘ بچوں کی ڈی وی ڈی اور کرسمس موسیقی کی سی ڈی کو تباہ کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ طالبان نے افغانستان میں اپنے گزشتہ دورِ حکومت میں موسیقی کے آلات اور کیسٹ ٹیپس کو تباہ کردیا تھا۔ طالبان کے دورِ حکومت میں موسیقاروں کو اذیت رسانی کی گئی تھی۔

ذریعہ
یو این آئییو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.