انڈونیشیا میں آتش فشاں پھٹنے سے مہلوکین کی تعداد 14 ہوگئی

انڈونیشیا کی ڈیزاسٹر ایجنسی کا کہنا ہے کہ کئی بار امدادی ٹیموں کو راکھ تلے دبے متاثرین کو تلاش کرنے کے لیے اپنے ہاتھوں سے کھدائی کرنی پڑتی ہے۔

جکارتہ: انڈونیشیا کے صوبہ مشرقی جاوا میں ماونٹ سیمرو کے پھٹ پڑنے سے مہلوکین کی تعداد 14 تک بڑ ھ گئی ہے جبکہ دیگر9 ہنوز لاپتہ ہیں۔

انڈونیشیا کی ڈیزاسٹر ایجنسی کا کہنا ہے کہ کئی بار امدادی ٹیموں کو راکھ تلے دبے متاثرین کو تلاش کرنے کے لیے اپنے ہاتھوں سے کھدائی کرنی پڑتی ہے۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق جاوا کے سب سے اونچے پہاڑ سیمیرو میں آتش فشاں پھٹ گیا جس کی وجہ سے گرم دھویں اور راکھ نے مشرقی جاوا صوبے کے قریبی دیہاتوں کو لپیٹ میں لیے لیا، لوگ خوف و ہراس کے باعث علاقہ چھوڑنے پر مجبور ہوگئے۔

حکام کا کہنا ہے کہ آتش فشاں پھٹنے سے عمارتیں تباہ ہو گئیں اور قریبی ضلع لوماجنگ کے 2 علاقوں کو ملنگ شہر سے ملانے والا ایک اسٹریٹجک پْل ٹوٹ گیا۔

بی این پی بی کے عہدیدار نے پریس کانفرنس میں بتایا گیا کہ 14 افراد ہلاک ہوئے ہیں، جن میں سے 9 کی شناخت کی جاچکی ہے جبکہ 56 افراد زخمی ہیں، جن میں سے اکثر جھلس گئے ہیں۔

بی این پی بی نے کہا کہ کم و بیش ایک ہزار 300 افراد کو نکال لیا گیا ہے، جبکہ 9 اب بھی لاپتا ہیں۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.