جاریہ سال صیہونی دہشت گردوں نے 77 فلسطینی بچوں کو قتل کیا

2000 سے لے کر رواں سال کے اکتوبر مہینے کے اختتام تک 2200 فلسطینی بچے باوردی صیہونی دہشت گردوں کے ہاتھوں قتل کئے جا چکے ہیں۔

یروشلم: بچوں کا دفاع کرنے والی عالمی تحریک نے اعلان کیا ہے کہ غاصب صیہونی حکومت کے باوردی دہشت گرد جاریہ سال اب تک 77 فلسطینی بچوں کو گولی مار کر قتل کر چکے ہیں۔

روسیا الیوم ویب سائٹ کے مطابق بچوں کے حقوق کا دفاع کرنے والی عالمی تحریک نے اپنی تازہ ترین رپورٹ میں یہ اعلان کیا ہے کہ 2000 سے لے کر رواں سال کے اکتوبر مہینے کے اختتام تک 2200 فلسطینی بچے باوردی صیہونی دہشت گردوں کے ہاتھوں قتل کئے جا چکے ہیں۔

مذکورہ تنظیم کے بیان میں آیا ہے کہ صیہونی دہشت گرد (فوجی) فلسطینیوں کو مغلوب کرنے کے لئے جان بوجھ کر انہیں فائرنگ کا نشانہ بناتے ہیں اور وہ بھی ایسے حالات میں کہ جب بین الاقوامی ضابطوں اور قوانین کی رو سے فائرنگ کرنے اور گولی مارنے کا کوئی قانونی جواز انکے پاس نہیں ہوتا۔

تنظیم کا کہنا ہے کہ غاصب صیہونی حکومت در حقیقت سزا اور جوابدہی کی طرف سے خود کو حاصل احساس تحفظ کا بھرپور فائدہ اٹھاتی ہے اور مسلسل اس طرح کے گھناؤنے جرائم کا ارتکاب کرتی رہتی ہے۔

ذریعہ
ایجنسیز

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.