جناح کے اثاثوں کا پتہ چلانے کمیشن کا قیام

سندھ ہائی کورٹ کے حکم پر منگل کے دن ریٹائرڈ جسٹس فہیم احمد صدیقی کی قیادت میں یہ کمیشن قائم ہوا۔

کراچی: پاکستان کی ایک عدالت نے بانی پاکستان محمد علی جناح اور ان کی بہن فاطمہ جناح کے اثاثوں کی تحقیقات کے لئے واحد رکنی کمیشن قائم کیا ہے۔

سندھ ہائی کورٹ کے حکم پر منگل کے دن ریٹائرڈ جسٹس فہیم احمد صدیقی کی قیادت میں یہ کمیشن قائم ہوا۔

سندھ ہائی کورٹ نے جناح اور ان کی بہن کی جائیدادوں بشمول شیئرس‘ جیولری‘ کاروں اور بینک بیالنس سے متعلق 50 سال پرانے مقدمہ کی سماعت کے دوران یہ حکم دیا۔

جسٹس ذوالفقار احمد خان کی بنچ نے نوٹ لیا کہ فاطمہ جناح مرحومہ کے رشتہ دار حسین والیجی کے دائر کردہ مقدمہ کے مطابق بھائی بہن کے اثاثے برآمد نہیں ہوئے‘ ایسا لگتا ہے کہ یہ کھوگئے ہیں۔

اسی دوران سندھ ہائی کورٹ میں کراچی کے قصر ِ فاطمہ (جو عام طورپر موہٹہ پیالیس کہلاتا ہے) کے ٹرسٹیوں اور حکومت کے درمیان ایک علیحدہ مقدمہ زیرسماعت ہے۔

فاطمہ جناح کے اس محل میں حکومت‘ میڈیکل کالج بنانا چاہتی ہے۔ موہٹہ پیالیس میں فی الحال ایک میوزیم (عجائب گھر) اور آرٹس گیلری ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.