داعش کوئی بڑا مسئلہ نہیں،صفایہ کردیاجائے گا۔ذبیح اللہ مجاہد کا انٹرویو

امریکی میڈیا کو دیے گئے انٹرویومیں انہوں نے کہا کہ داعش طالبان کے لیے کوئی بڑا مسئلہ نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ بر وقت کارروائی کے ذریعے داعش کے کئی حملوں کو روکا گیا ہے، داعش کے تمام کارندے افغانی ہیں، ان میں کوئی غیر ملکی شامل نہیں۔

کابل: افغانستان کے قائم مقام معاون وزیر برائے اطلاعات و ثقافت ذبیح اللّٰہ مجاہد نے کہا کہ ہم افغانستان سے داعش کا صفایا کر نے کا تہیہ کرچکے ہیں۔

امریکی میڈیا کو دیے گئے انٹرویومیں انہوں نے کہا کہ داعش طالبان کے لیے کوئی بڑا مسئلہ نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ بر وقت کارروائی کے ذریعے داعش کے کئی حملوں کو روکا گیا ہے، داعش کے تمام کارندے افغانی ہیں، ان میں کوئی غیر ملکی شامل نہیں۔

ذبیح اللّٰہ مجاہد نے کہا کہ افغانستان میں داعش کے کارندے مٹھی بھر تعداد میں موجود ہیں، گزشتہ دنوں داعش کے کئی ٹھکانوں کو مسمار کیاگیا اور متعد افراد گرفتار کرلیے گئے۔انہوں نے بتایا کہ چین افغانستان میں چینی کارکنان اور اثاثوں کی سیکیورٹی کی ضمانت پر اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری کے لیے تیار ہے۔

افغان قائم مقام معاون وزیر برائے اطلاعات و ثقافت نے کہا کہ ملک میں معاشی صورتِ حال معمول پر لوٹ رہی ہے، قومی وسائل اکٹھے کر رہے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ افغان تاجر نئی سرمایہ کاری کے لیے تیار ہیں، سڑکوں کی تعمیر کیبشمول اہم منصوبوں پر کام کیا جا رہا ہے، نیز ممالک کے ساتھ معدنیات کی تلاش کے سمجھوتے کئے جارہے ہیں۔ ذبیح اللّٰہ مجاہد کا کہنا ہے کہ افغانستان کے اثاثوں کو منجمد کرنا افغان عوام کے ساتھ زیادتی کے مترادف ہے،اس تعلق سے امریکہ کے ساتھ مذاکرات کر رہے ہیں۔

ذریعہ
اے پی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.