شمالی کوریا کا پابندی کے باوجودایک اور میزائل تجربہ

میزائل کو صبح 6 بج کر 40 منٹ پر مشرقی سمت میں جگنگ صوبے میں شمال کے موپیونگ-ری سے مشرق کی جانب داغا گیا۔ جے سی ایس نے بتا یاکہ تجزبہ کے بارے میں مزید معلومات حاصل کرنے کے لئے جنوبی کوریائی اور امریکی خفیہ افسران اس کا تجزیہ کر رہے ہیں۔

سیول: شمالی کوریا نے آج صبح سمندرمیں ایک مختصر فاصلاتی میزائل کاتجربہ کیا۔ اس کے پڑوسی ممالک نے یہ بات بتائی۔ حالیہ عرصہ میں شمالی کوریا نے تازہ ترین اسلحہ کا تجربہ کیاتھا جس سے جنوبی کوریا کے ساتھ مذاکرات کے لیے اس کا حالیہ پیشکش مشتبہ ہوگیاہے۔ ایمرجنسی نیشنل سیکیورٹی کونسل میٹنگ نے جنوبی کوریا کی حکومت نے شمال کی جانب سے میزائل داغے جانے پر افسوس کااظہار کیا۔

 قبل ازیں جنوبی کوریا کی فوج نے بتایا تھا کہ شمالی کوریا کے پہاڑی شمالی علاقہ صوبہ جگان کے جو میزائل داغا گیاتھا وہ شمال مشرقی سمندر میں جاگرا۔ امریکہ ہند۔ بحرالکاہل کمانڈ میں بتایا کہ میزائل کی لانچ سے امریکہ یا اس کے علاقہ کے یا ہمارے حلیفوں کے لیے کوئی خطرہ پیدا نہیں ہوتاہے۔یو این آئی کے بموجب  شمالی کوریا نے منگل کے روز جاپان کے سمندر (مشرقی سمندر) میں کم دوری تک مار کرنے والے بیالسٹک میزائل کا تجربہ کیا۔جنوبی کوریا کے جوائنٹ چیف آف اسٹاف (جے سی ایس) نے یہ اطلاع دی۔

 میزائل کو صبح 6 بج کر 40 منٹ پر مشرقی سمت میں جگنگ صوبے میں شمال کے موپیونگ-ری سے مشرق کی جانب داغا گیا۔ جے سی ایس نے بتا یاکہ تجزبہ کے بارے میں مزید معلومات حاصل کرنے کے لئے جنوبی کوریائی اور امریکی خفیہ افسران اس کا تجزیہ کر رہے ہیں۔جاپانی حکومت نے کہا کہ ایک بیالسٹک میزائل نما پروجیکٹائل آج صبح اپنے خصوصی اقتصادی زون کے باہر سمندر میں گرا۔

یہ لانچ شمالی کوریا کے لیڈر کم جونگ ان کی بہن کم یو جونگ کے اس بیان کے تین دن بعد کیا گیا ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ پیانگ یانگ جنوبی کوریا کی تجویز کے مطابق کوریائی جنگ کو باضابطہ طور پرکے خاتمہ کا اعلان کر سکتا ہے اور یہاں تک کہ چوٹی کانفرنس کے امکانات پر بھی تبادلہ خیال کرسکتا ہے بشرطیکہ جنوبی کوریا، شمالی کوریا کے خلاف اپنا دوہرا معیار اور دشمنانہ رویہ ترک کردے۔

دریں اثنا، سیول میں اعلی سیکورٹی حکام نے قومی سلامتی کونسل کا ہنگامی سیکورٹی اجلاس طلب کیا اورتجربہ پر افسوس کا اظہار کیا۔ ان کے دفتر نے کہا کہ صدر مون جے ان نے شمالی کوریا کے میزائل لانچ اور حالیہ بیانات کے ”جامع تجزیہ“ کا حکم دیا ہے۔ امریکہ نے اس کی مذمت کی ہے جبکہ اقوام متحدہ میں پیانگ یانگ کے سفیر نے اپنے ملک کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ ہتھیاروں کا تجربہ کرنا اس کا حق ہے۔

شمالی کوریا نے منگل کی صبح کو ایک بیلسٹک میزائل کا تجربہ کیا ہے۔ اس سے چند گھنٹے قبل ہی اقوام متحدہ میں شمالی کوریا کے نمائندہ نے تقریر کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کے ملک کے خلاف دیگر ملکوں کی ”مخاصمانہ” پالیسیوں کی وجہ سے پیانگ یانگ کو ہتھیاروں کا تجربہ کرنے کا حق حاصل ہے۔ایک ماہ کے دوران شمالی کوریا کا میزائلوں کا یہ تیسرا تجربہ ہے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.