مشرقی افغانستان کی مسجد میں دھماکہ، 15 افراد زخمی

صوبہ ننگرہار کے سرکاری ترجمان قاری حنیف نے بتایا کہ ایسا لگتا ہے کہ صوبائی دارالحکومت جلال آباد کے باہر پہاڑی اسپن گھر علاقہ ترالی ٹاؤن کی مسجد کے اندر بم رکھا گیا تھا۔

کابل: مشرقی افغانستان میں نماز ِجمعہ کے دوران ایک مسجد میں بم دھماکہ ہوا جس میں 15  افرادزخمی ہوگئے۔ مشرقی افغانستان میں اسلامک اسٹیٹ/ داعش کے عسکریت پسندوں نے تشدد برپا کرنے کی مہم چھیڑرکھی ہے۔

صوبہ ننگرہار کے سرکاری ترجمان قاری حنیف نے بتایا کہ ایسا لگتا ہے کہ صوبائی دارالحکومت جلال آباد کے باہر پہاڑی اسپن گھر علاقہ ترالی ٹاؤن کی مسجد کے اندر بم رکھا گیا تھا۔

اسلامک اسٹیٹ کے عسکریت پسند صوبہ میں طالبان لڑاکوں کے خلاف لگ بھگ روزانہ فائرنگ اور بم حملے کررہے ہیں لیکن علاقہ کی مساجد میں اسلامک اسٹیٹ نے بم دھماکہ کیا ہو ایسا کبھی کبھار ہی ہوا ہے کیونکہ اس علاقہ میں سنی مسلمانوں کی اکثریت ہے اور داعش افغانستان کی شیعہ اقلیت کی مساجد کو نشانہ بنانے کے لئے جانی جاتی ہے۔

تین ماہ قبل افغانستان میں برسراقتدار آنے کے بعد سے طالبان نے شورش پسندی کے خلاف مہم چھیڑرکھی ہے۔ انہوں نے اسلامک اسٹیٹ کے خطرات کوکچل دینے کا عہد کیا ہے۔ اسلامک اسٹیٹ طالبان کی دشمن ہے۔

ذریعہ
اے پی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.