پاکستان میں توہین مذہب کے الزام میں ہجوم کا حملہ

یہ واقعہ سیالکوٹ میں وزیرآباد روڈ پر پیش آیا۔ جہاں اطلاع کے مطابق ایک خانگی فیاکٹری کے ورکرس نے فیاکٹری کے اکسپورٹ منیجر پر حملہ کردیا اور اس کی ہلاکت کے بعد نعش کو جلا دیا۔

نئی دہلی: پاکستان کے سیالکوٹ میں ایک ہجوم نے جمعہ کو سری لنکائی شہری کوتوہین مذہب کے الزام میں اذیت دیتے ہوئے اسے ہلاک کردیا اوراس کی نعش کو نذر آتش کردیا۔ ڈان نے یہ اطلاع دی ہے۔

پولیس کا بھاری دستہ اس علاقہ کو بھیج دیا گیا ہے تاکہ حالات پر قابو پایا جاسکے۔ سیالکوٹ ضلع پولیس عہدیدار عمر سعید ملک نے کہاکہ اس شخص کی شناخت پریاناتھ کمارا کی حیثیت سے ہوئی ہے جو سری لنکائی شہری ہے۔

یہ واقعہ سیالکوٹ میں وزیرآباد روڈ پر پیش آیا۔ جہاں اطلاع کے مطابق ایک خانگی فیاکٹری کے ورکرس نے فیاکٹری کے اکسپورٹ منیجر پر حملہ کردیا اور اس کی ہلاکت کے بعد نعش کو جلا دیا۔

سوشل میڈیا پر شیئر کئے گئے ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ سیکڑوں افراد جن میں لڑکے بھی شامل تھے‘ اس مقام پر اکٹھا دیکھے گئے۔ پاکستان پنجاب چیف منسٹر عثمان بزدر نے قتل کا نوٹس لیا ہے اور اسے انتہائی المناک واقعہ قراردیا۔

جبکہ سیالکوٹ پولیس کے ترجمان نے بتایا کہ میڈیا کے ساتھ ابتدائی تحقیقات کے بعد تفصیلات کو شیئر کیا جائے گا۔ بزدر نے انسپکٹر جنرل پولیس سے رپورٹ طلب کی ہے اور حکم دیا ہے کہ اعلیٰ سطحی تحقیقات اس واقعہ کی کی جائے۔

واقعہ کے ہر معاملہ کی تحقیقات ہونی چاہئے اور رپورٹ پیش کی جائے۔ ان لوگوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی جنہوں نے قانون کو اپنے ہاتھ میں لیا ہے۔ چیف منسٹر نے یہ بات کہی۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.