کابل میں خود کش بمبار کی گاڑی پر امریکی فضائی حملہ

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے بھی حملے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ امریکی حملے میں ایک مبینہ خودکش حملہ آور کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

کابل: امریکہ نے اتوار کو داعش خراساں سے تعلق رکھنے والے کئی خودکش بمباروں کو لے جانے والی ایک گاڑی کو نشانہ بناکر اس وقت فضائی حملہ کیا جب وہ کابل انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر جاریہ امریکی فوجی انخلاء کو نشانہ بنانا چاہتے تھے۔ عہدیداروں نے یہ اطلاع دی۔

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے بھی حملے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ امریکی حملے میں ایک مبینہ خودکش حملہ آور کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

اے ایف پی کے مطابق امریکی سینٹرل کمانڈ کے ترجمان نے حملے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ ڈرون حملے میں ایک خودکش بمبار کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا۔

امریکی حکام کے مطابق خود کش بمبار کا تعلق داعش خراسان سے تھا جو کہ کابل ائیرپورٹ پر حملہ کرنے جارہا تھا۔ آج کا ڈرون حملہ کابل ایرپورٹ پر دوہرے دھماکوں کے بعد سے جس میں 169 افغانی شہری اور 13 امریکی سپاہی ہلاک ہوگئے تھے امریکہ کی جانب سے دوسرا حملہ ہے۔

امریکی ملٹری نے ہفتہ کے دن بتایا تھا کہ اس نے افغانستان میں ڈرون حملہ کیا اور آئی ایس سے ملحقہ افغانستان کی تنظیم سے تعلق رکھنے والے دو سرکردہ منصوبہ سازوں و سہولت فراہم کرنے والوں کو ہلاک کردیا۔ یہ وہ تنظیم ہے جس نے جمعرات کے روز کابل ایرپورٹ پر حملہ کی ذمہ داری قبول کی تھی۔

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.