کابل میں 2 دھماکے‘ 19 افراد ہلاک

سوشیل میڈیا پوسٹس اور میڈیا خبروں میں کہا گیا ہے کہ فدائن حملے ملک کے ایک بڑے فوجی ہسپتال سردار محمد داؤدخان ہاسپٹل کے سامنے ہوئے۔

کابل: افغان دارالحکومت منگل کے دن 2 طاقتور پے درپے دھماکوں سے دہل گیا۔ کم ازکم 19  افرادہلاک اور دیگر 50 زخمی ہوگئے۔ وزارت صحت نے یہ بات بتائی۔ میڈیا رپورٹس میں انہیں فدائن حملے کہا گیا ہے۔ غیرمصدقہ میڈیا اطلاعات میں ہلاکتوں کی تعداد 23 بتائی گئی ہے۔ طالبان عہدیدار قاری سید خوستی نے دھماکوں کی توثیق کی ہے۔

 سوشیل میڈیا پوسٹس اور میڈیا خبروں میں کہا گیا ہے کہ فدائن حملے ملک کے ایک بڑے فوجی ہسپتال سردار محمد داؤدخان ہاسپٹل کے سامنے ہوئے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ مقام دھماکہ سے چھوٹے ہتھیاروں سے گولیاں چلنے کی آواز سنائی دی۔

 میڈیا اطلاعات میں قبل ازیں کہا گیا تھا کہ 2مقامات بشمول وزیر اکبر خان ہاسپٹل میں دھماکے ہوئے۔ بعدازاں کہا گیا کہ دونوں دھماکے سردار محمد داؤدخان ہاسپٹل کے سامنے ہوئے۔ ایک عینی شاہد نے روسی خبررساں ادارہ اسپوٹنک کو بتایا کہ وزارت صحت سے متصل 400 بستروں والے دواخانہ پر ایک خودکش بمبار نے حملہ کیا۔ سردار محمد داؤدخان ہاسپٹل کے قریب یہ دوسرا دھماکہ ہے۔

آئی اے این ایس کے بموجب افغانستان کے سب سے بڑے فوجی ہاسپٹل کے قریب 2 طاقتوردھماکوں اور اس کے بعد گولیاں چلنے سے کم ازکم 19  ہلاکتیں ہوئیں اور 40  افراد زخمی ہوئے۔ افغان دارالحکومت میں سردار محمد داؤدخان ملٹری ہاسپٹل کے قریب گولیاں چلنے کی آواز بھی سنائی دی۔

 اسلامی امارت کے نائب ترجمان بلال کریمی نے اخباری نمائندوں کو بتایا کہ 400 بستروں والے دواخانہ کے باب الداخلہ پر کم ازکم 2  دھماکے ہوئے۔ عینی شاہدین نے الجزیرہ کو بتایا کہ یہ کار بم دھماکہ تھا۔ بلال کریمی کے بموجب دوسرا دھماکہ بھی دواخانہ کے قریبی علاقہ میں ہوا۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.