کرتارپور راہداری کی دوبارہ کشادگی، 28 ہندوستانی سکھ یاتریوں کی پاکستان آمد

پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے راہداری کشادگی کو خوش آئند قرار دیا

لاہور: پاکستان میں واقع گردوارہ کرتار پور صاحب میں آج 28 ہندوستانی سکھ یاتریوں کا پہلا جتھہ پہنچا جن میں خواتین بھی شامل ہیں۔

کووڈ۔19 کی وبا کے پھیلاؤ کے سبب مارچ 2020 میں یاترا کو معطل کرنے کے تقریباً 20 ماہ بعد یہ لوگ ویزا فری راہداری استعمال کرتے ہوئے یہاں پہنچے۔

اسی طرح واگھا سرحد کے ذریعہ زائداز 2500 ہندوستانی سکھ یاتری پاکستان پہنچے تاکہ سکھ مت کے بانی گرونانک دیو کے یوم پیدائش کے سالانہ جشن میں حصہ لے سکیں۔

ٹرسٹ پراپرٹی بورڈ (ای ٹی پی بی) کے ترجمان امیر ہاشمی نے پی ٹی آئی کو بتایا کہ لگ بھگ 28 ہندوستانی سکھ یاتریوں نے جن میں خواتین بھی شامل ہیں، حکومت ہند کی جانب سے راہداری کو کھلے جانے کے پہلے دن آج (چہارشنبہ کے روز) کرتارپور صاحب کا دورہ کیا۔

ہاشمی نے بتایا کہ یاتریوں نے کئی گھنٹے گردوارہ میں گزارے اور وطن واپسی سے پہلے دیگر مذہبی رسومات انجام دیں۔ یہ راہداری پاکستان میں گردوارہ دربار صاحب کو جہاں گرو نانک دیو رہتے تھے اور سولہویں صدی کے آغاز میں وہیں ان کا انتقال ہوا تھا، پنجاب کے ضلع گرداس پور میں ڈیرہ بابا نانک شاہ سے جوڑتی ہے۔

چار کیلو میٹر طویل راہداری ہندوستانی یاتریوں کو گردوارہ دربار صاحب کے دورہ کیلئے ویزا سے پاک راہداری فراہم کرتی ہے۔ پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کرتار پور راہداری کی دوبارہ کشادگی کو ”خوش آئند“ قرار دیا ہے۔ انہوں نے آج اسلام آباد میں پارلیمنٹ کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ میں حکومت پاکستان اور پاکستانی عوام کی جانب سے سکھ یاتریوں کا خیرمقدم کرتا ہوں۔

سکھ یاتری آج سے اس راہداری کے ذریعہ اپنے مقدس مقامات کا دورہ کرنے یہاں آئیں گے۔ علحدہ طور پر زائداز 2500 ہندوستانی سکھ واگھا سرحد پیدل عبور کرتے ہوئے آج پاکستان میں داخل ہوئے۔ ایک عہدیدار نے پی ٹی آئی کو بتایا کہ یاتری، چہارشنبہ کی صبح 6 بجے سے قطار میں تھے۔

امیگریشن اور ویکسین کے علاوہ کووڈ سے متعلق دیگر معائنوں کی وجہ سے یہ عمل سست رفتار رہا جس کی وجہ سے یاتریوں کو کافی زحمت اٹھانی پڑی۔ انہوں نے کہا کہ ماضی کے برعکس جب یاتری بذریعہ ٹرین یہاں آتے تھے، پیدل یہاں پہنچے جس کی وجہ سے امیگریشن کا سارا عمل طویل ہوگیا۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.