87 فیصد پاکستانیوں کا ماننا ہے کہ ملک غلط سمت میں جارہا ہے : سروے

آئی پی ایس او ایس کی صارفین کے اعتماد کے اشاریہ سے متعلق چوتھی رپورٹ کے مطابق 43 فیصد پاکستانی، مہنگائی کو ملک کا سب سے بڑا مسئلہ سمجھتے ہیں۔

نئی دہلی: ایک ریسرچ کمپنی آئی پی ایس او ایس پاکستان کی جانب سے کئے گئے تازہ سروے میں کہاگیا ہے کہ کم از کم 87 فیصد پاکستانیوں کا مانناہے کہ ملک غلط سمت میں جارہاہے۔

جیو نیوز کی اطلاع کے مطابق جاریہ ماہ منعقدہ اس سروے میں تقریباً 1100 افراد نے حصہ لیا۔ آئی پی ایس او ایس کی صارفین کے اعتماد کے اشاریہ سے متعلق چوتھی رپورٹ کے مطابق 43 فیصد پاکستانی‘ مہنگائی کو ملک کا سب سے بڑا مسئلہ سمجھتے ہیں۔

14 فیصد افراد نے بیروزگاری کو پاکستان کا سب سے اہم اور پریشان کن مسئلہ قرار دیا جبکہ 12 فیصد نے غربت کو سب سے اہم مسئلہ قرار دیا۔ سروے کے 46 فیصد شرکاء نے پاکستان کی اقتصادی حالت کو کمزور قرار دیا اور صرف5 فیصد افراد نے اسے درست مانا۔

آئی پی ایس او ایس کے مطابق گذشتہ سروے میں 26 فیصد پاکستانیوں نے مہنگائی کو ملک کا سب سے بڑا مسئلہ قرار دیا تھا۔ سروے کے مطابق سروے میں حصہ لینے والے شرکاء جنہوں نے کورونا وائرس کو سب سے اہم مسئلہ قرار دیاتھا ان کی تعداد 18 سے گھٹ کر 8 فیصد ہوگئی ہے۔

سروے سے انکشاف ہواہے کہ لوگوں نے مہنگائی اور اقتصادی مسائل کو سب سے بڑے مسائل قرار دیا۔ بڑھتی قیمتوں اور بیروزگاری کو بھی بیشتر افراد کے لیے اہم مسائل قرار دیاگیا۔

سروے میں حصہ لینے والے 49 فیصد شرکاء نے پاکستان کی موجودہ اقتصادی حالت کو ٹھیک قرار دیا لیکن 46 فیصد نے واضح طور پر کہاکہ اقتصادی حالت کمزور ہے۔صرف 5 فیصد افراد نے کہاکہ ملک کی اقتصادی حالت طاقتور ہے۔

اقتصادی صورتحال میں آئندہ 6ماہ کے دوران بہتری سے متعلق سوال پر 64 فیصد شرکاء نے کہا کہ انہیں کوئی امید نہیں ہے جبکہ 12 فیصد نے کہاکہ انہیں معیشت میں بہتری کی امید ہے۔ 24 فیصد افراد نے نہ تو کسی امید کااظہار کیا اور نہ مایوسی کا شرکاء کی شخصی مالی صورتحال سے متعلق سوال پر 47 فیصد نے جواب دیا کہ یہ کمزور اور غیر مستحکم ہے جبکہ 5 فیصد نے اسے مضبوط بتایا۔

بہر حال 48 فیصد افراد نے کہا کہ ان کی مالی صورتحال نہ تو کمزور ہے اور نہ تو طاقتور۔آئی پی ایس او ایس کے مطابق 20 افراد نے کہا ہے کہ جون 2021 کے بعد ان کی مالی حالت خراب ہوگئی۔ آئندہ 6ماہ میں مالی حالت میں بہتری کی امید سے متعلق سوال پر 63 فیصد افراد نے اندیشہ ظاہر کیا کہ یہ کمزور ہی رہے گی۔ 13 فیصد افراد نے اس کے بہتر ہونے کی امید ظاہر کی جبکہ 24 فیصد نے غیر یقینی کیفیت کااظہار کیا۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.