دو ریاستی طریقہ کار سے تنازعہ کی یکسوئی متوقع : صدر فلسطین

محمود عباس نے مزید کہا ہے کہ ہم اسرائیل کے ساتھ تعاون کرنے کیلئے تیار ہیں اور ہم دست تعاون دراز کر رہے ہیں اور اب اسرائیل کا کام ہے کہ وہ سیاسی تنازعہ کی یکسوئی کیلئے پیشرفت کرے۔

رملہ: فلسطین کے صدر محمود عباس نے اسرائیل پر زور دیا ہے کہ وہ تنازعہ کی یکسوئی کیلئے راہ ہموار کرے۔ انہوں نے کہا ہے کہ اسرائیل کو چاہیئے کہ وہ نیا سیاسی طریقہ کار اختیار کرتے ہوئے علاقہ میں قیام امن کو یقینی بنائیں۔

اس سلسلہ میں انہوں نے دو ریاستی حل کا تذکرہ کیا اور کہا ہے کہ مذکورہ طریقہ کار کو اگر اختیار کیا جائے تو اسرائیل اور فلسطین دونوں کیلئے سود مند ثابت ہوگا۔

محمود عباس نے مزید کہا ہے کہ ایسے اقدامات کئے جانے چاہیئے جس سے کہ دونوں فریقین میں اعتماد کا جذبہ پیدا ہوتا جائے۔ محمود عباس نے اس طرح کے ریمارکس سوئز ہم منصب جی پرمالین کے ساتھ اپنے دفتر واقع مغربی کنارہ میں ملاقات کے دوران کیا۔ یہ بات فلسطین کی سرکاری خبررساں ایجنسی وفا نے بتائی۔

محمود عباس نے کہا ہے کہ ہم اسرائیل سے یہ اپیل کر رہے ہیں کہ وہ فریقین میں اعتماد پیدا کرنے کیلئے اقدامات کریں تاکہ دو ریاستوں کے اصول کے مطابق تنازعہ کی یکسوئی کی راہ ہموار ہوسکے۔

محمود عباس نے مزید کہا ہے کہ ہم اسرائیل کے ساتھ تعاون کرنے کیلئے تیار ہیں اور ہم دست تعاون دراز کر رہے ہیں اور اب اسرائیل کا کام ہے کہ وہ سیاسی تنازعہ کی یکسوئی کیلئے پیشرفت کرے۔

انہوں نے کہا ہے کہ فلسطین کی جانب سے کوئی اشتعال انگیزی نہیں کی جائے گی کیونکہ فلسطینی عوام امن پسند ہیں۔ اس سلسلہ میں انہوں نے کہا ہے کہ فلسطینی عوام اسرائیلی مقبوضہ علاقوں میں عرصہ دراز سے زندگی بسر کر رہے ہیں۔

انہوں نے اس سلسلہ میں بین الاقوامی قانون کا احترام کرنے کی اپیل کی اور کہا ہے کہ اگر قانون کو پیش نظر رکھتے ہوئے تنازعہ کی یکسوئی کی کوشش کی جائے تو اس کے ثمر آور نتائج برآمد ہوں گے۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.