عراق نے بھی امریکہ کو انخلا کیلئے ڈیڈ لائن دے دی

امریکی صدر جو بائیڈن پہلے ہی عراق میں اپنے فوجیوں کا جنگی کردار ختم کرنے کا اعلان کرچکے ہیں، انہوں نے یہ اعلان ستائیس جولائی کوعراقی وزیراعظم مصطفیٰ الکاظمی سے بات چیت کے دوران کیا۔

بغداد: افغانستان سے مکمل امریکی انخلاء کے بعد عراق میں الفتح الائنس کے رہنما نے عراق سے امریکہ کو انخلا کی ڈیڈ لائن دے دی ہے۔

شفق نیوز رپورٹ کے مطابق عراق میں الفتح الائنس کے رہنما ہادی العامری نے کہا کہ عراق سے امریکا سمیت تمام غیر ملکی فورسز کو دو ہزار اکیس کے اختتام تک نکل جانا چاہیئے۔انہوں نے کہا کہ عراق سے امریکی فوجیوں کے انخلا کے بعد عراق کی سڑکوں پر ہتھیاروں کی نمائش نہیں ہوگی، ہادی العامری کا کہنا ہے کہ عراق میں پر امن انتقال اقتدار بیلٹ باکس کے زریعے ہی ممکن ہوسکتا ہے۔واضح رہے کہ اگلے ماہ کی دس تاریخ کو عراق میں پارلیمانی انتخابات منعقد ہونے جارہے ہیں۔

امریکی صدر جو بائیڈن پہلے ہی عراق میں اپنے فوجیوں کا جنگی کردار ختم کرنے کا اعلان کرچکے ہیں، انہوں نے یہ اعلان ستائیس جولائی کوعراقی وزیراعظم مصطفیٰ الکاظمی سے بات چیت کے دوران کیا۔

امریکی صدر کا کہنا تھا کہ دونوں ممالک کے درمیان تعلقات نئے دور میں داخل ہونے جا رہے ہیں، بائیڈن کا مزید کہنا تھا کہ امریکی فوجی عراق میں ’تربیت، مدد اور داعش کے سر اٹھانے پر اس سے نمٹنے کے لیے موجود ہوں گے۔
یاد رہے کہ اس وقت عراق میں ڈھائی ہزار سے زائد امریکی فوجی تعینات ہیں۔

ایک تبصرہ

  1. واقعی امریکہ کو دیگر ممالک میں اپنی دراندازی ختم کرنی چاہئے۔ ہر ممالک کی اپنی خودمختاری ہوتی ہے اور امریکہ کو کوئی حق نہیں ہے کہ مختلف حیلے بہانے کرتے ہوئے آزاد ممالک پر چڑھائی کردے۔

تبصرہ کریں

Back to top button
%d bloggers like this:

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.