امریکہ میں ہندوفوبک کانفرنس کی مخالفت

اوہیو کے ریپبلکن سینیٹر نیرج انتانی نے ٹویٹر پر کہا کہ میں اس کانفرنس کی ممکنہ حد تک سخت الفاظ میں مذمت کرتا ہوں۔

نئی دہلی: ہندو امریکن فاؤنڈیشن اور اوہیو اسٹیٹ سینیٹر نیرج انتانی نے ”ہندوفوبک“ کانفرنس کی مذمت کی ہے جو ستمبر میں مبینہ طورپر کئی امریکی یونیورسٹیوں کے زیراہتمام ”ڈسمینٹلنگ گلوبل ہندوتوا“ کے عنوان سے منعقد ہورہی ہے۔

اوہیو کے ریپبلکن سینیٹر نیرج انتانی نے ٹویٹر پر کہا کہ میں اس کانفرنس کی ممکنہ حد تک سخت الفاظ میں مذمت کرتا ہوں۔

ہندوامریکن فاؤنڈیشن کے سہاگ شکلا نے کہا کہ ہندوؤں نے اپنے مذہب کے نام پر کبھی بھی نسل کشی نہیں کی۔

ہندوؤں کو کئی بار نسل کشی کا سامنا کرنا پڑا۔ گزشتہ 50 برس میں ہندوؤں کو بنگلہ دیش میں نسل کشی اور افغانستن‘ بھوٹان‘ ہندوستانی کشمیر اور پاکستان میں نسلی مدہبی صفائے کا سامنا کرنا پڑا۔

ہندو امریکن فاؤنڈیشن نے چہارشنبہ کے دن 41 جامعات کو مکاتیب روانہ کئے۔

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.