وائٹ ہاؤس کی سابق مسلم عہدیدار کے ساتھ زیادتی کی کوشش

ہما عابدین نے انکشاف کیا ہے کہ سال 2000 میں ایک امریکی سینیٹر نے انہیں زیادتی کا نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی۔ انہوں نے یہ الزام اپنی آپ بیتی میں عائد کیا ہے۔

واشنگٹن: سابق امریکی سیکریٹری آف اسٹیٹ ہما عابدین نے انکشاف کیا ہے کہ ایک امریکی سینیٹر نے ان کے ساتھ زبردستی زیادتی کرنے کی کوشش کی۔ ہما عابدین اوباما انتظامیہ میں مشیر رہ چکی ہیں۔

امریکہ کی سابق سیکریٹری آف اسٹیٹ اور سابق صدارتی امیدوار ہیلری کلنٹن کی قریبی ساتھی ہما عابدین نے انکشاف کیا ہے کہ سال 2000 میں ایک امریکی سینیٹر نے انہیں زیادتی کا نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی۔ انہوں نے یہ الزام اپنی آپ بیتی میں عائد کیا ہے جو اے لائف آف مینی ورڈز کے عنوان سے آئندہ ہفتے شائع ہونے جا رہی ہے، انہوں نے زیادتی کا نشانہ بنانے والے امریکی سینیٹر کی شناخت ظاہر نہیں کی ہے۔

ہما عابدین نے کہا ہے کہ 2000 میں امریکی سینیٹر نے ان کی رضا مندی کے بغیر ان سے جسمانی تعلقات استوار کرنے کی کوشش کی اور اس ضمن میں انہوں نے کافی پیشرفت بھی کی تھی۔اے لائف آف مینی ورڈز میں ہما عابدین کی جانب سے درج کیے جانے والے واقعات کے اقتباسات جو منظر عام پر آئے ہیں، اس میں درج ہے کہ مذکورہ سینیٹر سمیت دیگر سینیٹرز کے ہمراہ ایک ڈنر کے بعد انہیں کافی کی پیشکش کی گئی جو انہوں نے قبول کی اور سینیٹر کے اپارٹمنٹ میں گئیں۔

انہوں نے لکھا ہے کہ کافی کے بعد سینیٹر نے اچانک زبردستی کی تو انہوں نے پوری قوت سے اسے دھکا دیا جس پر وہ حیران رہ گئے کیونکہ وہ مجھے پڑھنے میں غلطی کرچکے تھے۔ انہوں نے کہا ہے کہ امریکی سینیٹر نے بعد میں اپنی پیشرفت پر معافی بھی مانگی تھی۔

ہما عابدین پاکستانی والدہ اورہندوستانی والد کی صاحبزادی ہیں۔ وہ امریکی مسلمان ہیں اور اوبامہ انتظامیہ میں مشیربھی رہ چکی ہیں۔ان کے والد سید زین العابدین ہندوستانی مصنف ہیں جب کہ والدہ صالحہ محمود عابدین پاکستانی ہیں جو مختلف اخبارات و جرائد کے لیے کالم و تبصرے لکھتی رہی ہیں۔

ہما عابدین نے اپنے خاوند کے اسکینڈلز سامنے آنے پر 2016 میں علیحدگی اختیار کرلی تھی۔ وہ امریکی ریاست مشی گن میں پیدا ہوئی تھیں لیکن دو سال کی عمر میں والدین کے ہمراہ جدہ سعودی عرب چلی گئی تھیں جہاں انہوں نے ابتدائی تعلیم حاصل کی۔ امریکہ واپس آنے کے بعد ہما عابدین نے مختلف تعلیمی اداروں سے اعلیٰ تعلیم حاصل کی جس کے بعد اپنی پہلی ملازمت انہوں نے وائٹ ہاؤس میں کی تھی۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.