دروپدی مرمو کے بارے میں متنازعہ ٹویٹ۔ فلمساز رام گوپال ورما کے خلاف کیس درج

فلمساز رام گوپال ورما ایک نئے تنازعہ میں گھرگئے ہیں۔ وہ اکثر اپنے ٹویٹس کی وجہ سے مصیبت میں پڑجاتے ہیں۔ اس مرتبہ انہوں نے این ڈی اے کی صدارتی امیدوار دروپدی مرمو کے بارے میں ”مہابھارت“ کا حوالہ دیا ہے۔

نئی دہلی: فلمساز رام گوپال ورما ایک نئے تنازعہ میں گھرگئے ہیں۔ وہ اکثر اپنے ٹویٹس کی وجہ سے مصیبت میں پڑجاتے ہیں۔ اس مرتبہ انہوں نے این ڈی اے کی صدارتی امیدوار دروپدی مرمو کے بارے میں ”مہابھارت“ کا حوالہ دیا ہے۔

انہوں نے اپنے ٹویٹ میں کہا ”اگر دروپدی صدر ہیں تو پھر پانڈو اور کورو کون ہیں“۔ تلنگانہ کے بی جے پی لیڈر جی نارائن ریڈی نے اس ٹویٹ پر رام گوپال ورما کے خلاف شکایت درج کرائی ہے اور ان پر ایس سی/ایس ٹی برادری کی توہین کا الزام عائد کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پولیس ہم سے وعدہ کیا ہے کہ ان کے خلاف سخت کارروائی کرے گی جس کے بعد میں نہیں سمجھتا کہ وہ دوبارہ کسی کے خلاف ایسا گندہ بیان دیں گے۔ بعدازاں فلمساز ورما نے وضاحت جاری کی۔ انہوں نے کہا کہ مہابھارت میں دروپدی میرا پسندیدہ کردار ہے لیکن یہ نام بہت کم رکھا جاتا ہے اسی لئے مجھے اس سے وابستہ کردار یاد آگئے اور میں نے ان خیالات کا اظہار کیا۔

میرا ارادہ کسی کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے کا نہیں تھا۔ تلنگانہ کے ایک اور بی جے پی رکن اسمبلی نے رام گوپال ورما پر تنقید کی اور کہا کہ ڈائرکٹر نشہ کی حالت میں ایسے ٹویٹ کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ رام گوپال ورما ہمیشہ متنازعہ تبصرے کرتے ہوئے خبروں میں رہنا چاہتے ہیں۔

ورما نے حال ہی میں بالی ووڈ اداکار اجئے دیوگن اور کنڑا اداکار سدیپ سنجیو کے قومی زبان کے بارے میں دیئے گئے بیان کے تنازعہ میں شامل ہوگئے تھے۔ انہوں نے بالی ووڈ اداکاروں پر الزام عائد کیا تھا کہ وہ جنوبی ہند کے اداکاروں کی کامیابی سے حسد کرتے ہیں اور اپنے آپ کو غیرمحفوظ تصور کرتے ہیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button