دکان میں کام کرنے والوں نے پانی مانگنے پر تیزاب کی بوتل دے دی

کپڑوں کی دکان پر خریداری کے لیے آنے والے دو افراد کو متعلقہ دکان میں کام کرنے والوں نے پانی مانگنے پر تیزاب کی بوتل دے دی۔ دونوں پانی سمجھ کر تیزاب پی گئے۔

حیدرآباد: کپڑوں کی دکان پر خریداری کے لیے آنے والے دو افراد کو متعلقہ دکان میں کام کرنے والوں نے پانی مانگنے پر تیزاب کی بوتل دے دی۔ دونوں پانی سمجھ کر تیزاب پی گئے۔

یہ واقعہ نظام آباد شہر میں ہفتہ کے روز پیش آیا۔پانی سمجھ کر تیزاب پینے کے بعد ان دونوں کو اسپتال میں داخل کردیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق کاماریڈی ضلع کے نظام ساگر منڈل، محمد نگر گاوں سے تعلق رکھنے والے وجئے کمار اپنے ارکان خاندان کے ساتھ شادی کے کپڑے خریدنے کے لیے نظام آباد ون ٹاؤن پولیس اسٹیشن کے تحت آنے والے ایک کپڑے کی دکان پر آئے تھے۔

تھوڑی دیر بعد وجے کمار کو پیاس لگی اور اس نے دکان کے ملازمین سے پانی مانگا۔ ایک آدمی پانی کی بوتل لے کر آیا۔ وجے کمار نے اسے پی لیا۔

اس کے بعد وہاں موجود دکان کے ملازم نے بھی اسے پی لیا۔ تھوڑی دیر بعد دونوں کی طبیعت خراب ہوگئی انھیں فوری طور پر اسپتال منتقل کردیا گیاجن میں وجے کمار کی حالت تشویشناک ہونے پر حیدرآباد منتقل کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں

تبصرہ کریں

Back to top button