دینی مدارس میں قومی ترانہ پڑھنے کے لزوم کی حمایت: شاہنواز حسین

سینئر بی جے پی قائد سید شاہنواز حسین نے زور دے کر کہا کہ یوگی آدتیہ ناتھ انتظامیہ کی جانب سے اترپردیش کے تمام دینی مدارس میں قومی ترانہ پڑھنے کے لزوم کا حکم قطعی قابل اعتراض نہیں ہے۔

پٹنہ: سینئر بی جے پی قائد سید شاہنواز حسین نے زور دے کر کہا کہ یوگی آدتیہ ناتھ انتظامیہ کی جانب سے اترپردیش کے تمام دینی مدارس میں قومی ترانہ پڑھنے کے لزوم کا حکم قطعی قابل اعتراض نہیں ہے۔

بہار کے وزیر نے جو ہندو توا سیاست سے جڑی پارٹی کا ایک اہم مسلم چہرہ ہیں، یہ بھی دعویٰ کیا کہ اس مدرسہ میں جہاں انہوں نے تعلیم حاصل کی ہے ”جن گن من“ خوشی خوشی پڑھا جاتا تھا۔

صحافیوں نے جب ان سے یوپی مدرسہ بورڈ کے احکام کے بارے میں سوال کیا تو انہوں نے الٹا سوال کیا کہ کیا اب تک یوپی کے دینی مدرسوں میں قومی ترانہ نہیں پڑھا جارہا تھا؟ اگر ایسا ہے تو مجھے اس پر سخت حیرت ہے۔

میں نے خود دینی مدرسہ میں تعلیم حاصل کی ہے۔ وہاں ہم خوشی خوشی اور بہ رضا و رغبت قومی ترانہ پڑھا کرتے تھے۔ ملک کے لیے احترام کا اظہار کرنے میں کوئی قابل اعتراض بات نہیں ہے۔

یوپی بورڈ کے حکم کے تحت جماعتوں کے آغاز سے پہلے طلباء کے لیے قومی ترانہ پڑھنا لازمی ہوگا۔ بعض علماء نے اس ترانہ کے الفاظ پر برہمی ظاہر کی ہے اور کہا ہے کہ رابندر ناتھ ٹیگور کے لکھے گئے اس گیت کے بعض الفاظ ان کے مذہبی عقائد کے مغائر ہیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button