ذاکر نائک کی آئی آر ایف کو ٹریبونل کی نوٹس

15 نومبر کو مرکز نے 5 سال کے لئے آئی آر ایف کو غیرقانونی تنظیم قراردیا تھا۔ 13 دسمبر کو مرکز نے ٹریبونل قائم کی تاکہ وہ جائزہ لے کہ آیا اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن کو غیرقانونی تنظیم قراردینے کی معقول وجہ ہے یا نہیں۔

نئی دہلی: یو اے پی اے قانون کے تحت بنی ٹریبونل نے ذاکر نائک کی اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن (آئی آر ایف) کا موقف دریافت کیا ہے۔

دہلی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس ڈی این پٹیل نے جو واحد رکنی ٹریبونل کے جج ہیں‘ آئی آر ایف کو نوٹس جاری کی۔

مرکزی حکومت کی نمائندگی سالیسیٹر جنرل تشار مہتا نے کی۔

15 نومبر کو مرکز نے 5 سال کے لئے آئی آر ایف کو غیرقانونی تنظیم قراردیا تھا۔ 13 دسمبر کو مرکز نے ٹریبونل قائم کی تاکہ وہ جائزہ لے کہ آیا اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن کو غیرقانونی تنظیم قراردینے کی معقول وجہ ہے یا نہیں۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button