رام پور ہاٹ واقعہ،ممتا بنرجی کی ہدایت کے بعد انیر الحسن گرفتار

ممتا بنرجی کے رام پور ہاٹ سے روانہ ہونے کے فوری بعدہی پولیس نے انیرالحسن کو تاراپیٹھ کے ایک ہوٹل سے گرفتار کر لیاگیا۔ مقامی لوگوں کے مطابق انیر الحسن جو کہ پیشے سے مستری ہے، نے 2011میں سیاسی بلندی کا سفر طے کیا۔

کولکتہ: چیف منسٹر ممتا بنرجی کی ہدایت کے چند گھنٹے کے بعد ہی رام پور ہاٹ بلاک کے صدر انیر الحسن کو تاراپیٹھ سے گرفتار کیاگیاہے۔ چیف منسٹر ممتا بنرجی نے آج رام پور ہاٹ کے بوگتوئی گاؤں کا دورہ کیا اور متاثرین کے افراد خاندان سے ملاقات کی ۔ مقتولین کے افراد خاندان نے انیرالحسن کی گرفتاری کا مطالبہ کیا۔ اس کے بعد چیف منسٹر نے کہاکہ انیر الحسن کو خود سپردگی کرنی ہوگی یا پھر پولیس انہیں گرفتار کرے گی ۔

چیف منسٹر کی ہدایت پر جمعرات کی دوپہر انیر الحسن کے گھربڑی تعداد میں پولیس فورسیس پہنچ گئی ۔ گھر کی خواتین اور بچوں کو الگ کرکے تقریباً ایک گھنٹے تک پورے گھر کی تلاشی لی گئی۔ اس دوران انیر الحسن کے حامیوں نے گھر کے باہر احتجاج شروع کر دیا۔ ان کا دعویٰ ہے کہ انیرا لحسن کو انوبرتا منڈل پھنسارہے ہیں ۔

ممتا بنرجی کے رام پور ہاٹ سے روانہ ہونے کے فوری بعدہی پولیس نے انیرالحسن کو تاراپیٹھ کے ایک ہوٹل سے گرفتار کر لیاگیا۔ مقامی لوگوں کے مطابق انیر الحسن جو کہ پیشے سے مستری ہے، نے 2011میں سیاسی بلندی کا سفر طے کیا۔

 انہیں حال ہی میں ترنمول کی تنظیمی ردوبدل میں رام پورہاٹ نمبر 1 بلاک کا صدر مقرر کیا گیا ہے۔ان کے حامیوں کا دعویٰ ہے کہ بدھوشیخ کے قتل کے دن انیرالحسن اسپتال اور تھانے گئے تھے۔ وہ بگٹوئی گاؤں میں سونا شیخ کے گھر کی حدود میں نظر نہیں آئے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button