رانیل وکرما سنگھے  نے سری لنکا کے صدر کی حیثیت سے حلف لے لیا

وکرماسنگھے نے کہا کہ ملک میں چند ماہ قبل جو صورتحال پیدا ہوئی تھی وہ دوبارہ نہیں ہونی چاہیے، اس لیے سب کو متحد ہو کر آگے بڑھنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے لوگ ہم سے متحد ہو کر کام کرنے کی توقع رکھتے ہیں۔

کولمبو: رانیل وکرما سنگھے نے جمعرات کو سری لنکا کے صدر کے طور پر حکومت مخالف مظاہروں اور "گو بیک رانیل” کے نعروں کے درمیان حلف لیا۔ چیف جسٹس جیانتا جے سوریا نے پارلیمنٹ کے اندر وکرماسنگھے کو حلف دلایا۔ انہیں بدھ کو اراکین پارلیمنٹ نے قائم مقام صدر منتخب کیا تھا۔

 اس سے قبل گوٹابایا راجا پاکسے نے 14 جولائی کو استعفیٰ دے دیا تھا۔ واضح رہے کہ وکرما سنگھے کے صدر منتخب ہونے کے بعد بھی مظاہرین نے اپنا احتجاج جاری رکھا ہے اور صدر کے سکریٹریٹ کو اپنے کنٹرول میں رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

فادر جیونتا پیرس نے کہاکہ“آج کی پارلیمنٹ نے ثابت کر دیا ہے کہ وہ عوام کے ساتھ نہیں ہیں۔ عوام دشمن حکمران کی تعیناتی کے باوجود احتجاج جاری ہے۔ مظاہرین کا کہنا ہے کہ ان کا مقصد معاشی، سیاسی اور سماجی بحران کو ختم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مظاہرین راشٹرپتی بھون کے سامنے جمع ہوئے اور ‘گو بیک رانیل’ کے نعرے لگائے۔

اپنی حلف برداری کی تقریب کے دوران پارلیمنٹ سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر وکرماسنگھے نے کہا کہ ملک میں چند ماہ قبل جو صورتحال پیدا ہوئی تھی وہ دوبارہ نہیں ہونی چاہیے، اس لیے سب کو متحد ہو کر آگے بڑھنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے لوگ ہم سے متحد ہو کر کام کرنے کی توقع رکھتے ہیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button