راہول اور پرینکا کی ٹیمیں نتائج کو بہتر بنانے میں ناکام

اترکھنڈ میں جہاں ہر 5 سال بعد حکومت تبدیل ہونے کی روایت ہے‘ کانگریس دوبارہ اقتدار حاصل کرنے میں ناکام ہورہی ہے۔

نئی دہلی: ایک ایسے وقت جبکہ رجحانات سے یہ ظاہر ہورہا ہے کہ بی جے پی چاروں ریاستوں میں جہاں وہ برسراقتدار ہے‘ دوبارہ حکومت بنائے گی اور کانگریس پنجاب ہارنے کے کنارے پر ہے‘ اب تمام تر توجہ اُس قیادت اور ٹیم پر مرکوز ہوجاتی ہے جو پس ِ پردہ کام کررہی تھی چاہے وہ راہول گاندھی کی ٹیم ہو یا پرینکا گاندھی وڈرا کی۔

راہول اور پرینکا کی ٹیموں اور قیادت پر انگلیاں اٹھائی جائیں گی۔ راہول گاندھی کی ٹیم جس میں کے سی وینوگوپال‘ رندیپ سنگھ سرجے والا اور ریاستی انچارجس شامل تھے‘ ان ریاستوں میں نتائج کو بہتر نہیں بناسکی جہاں انتخابات ہوئے تھے۔

اترکھنڈ میں جہاں ہر 5 سال بعد حکومت تبدیل ہونے کی روایت ہے‘ کانگریس دوبارہ اقتدار حاصل کرنے میں ناکام ہورہی ہے۔

ابتدا میں ریاستی انچارج دیویندر یادو گروہوں کو نہیں سنبھال سکے اور بعدازاں سینئر قائدین کو روانہ کیا لیکن اس میں قیمتی وقت ضائع ہوگیا۔ یہ پارٹی 2 ذیلی پارٹیوں میں تقسیم ہوگئی جو مل جل کر کام کرنے کے لئے تیار نہیں تھیں۔

گوا میں تینوں ریاستی انچارجوں بشمول دنیش گنڈوراؤ‘ گریش چھوڑنکر (ریاستی صدر) اور ڈگمبر کامت (سابق چیف منسٹر) نے لوئی زنہو فلیریو جیسے ریاستی قائدین کو نظرانداز کیا جو ترنمول کانگریس میں شامل ہوگئے جبکہ فرانسسکو سرڈنہا جیسے قائدین کو حاشیہ پر لادیا گیا حتیٰ کہ پی چدمبرم جو سینئر مبصر تھے‘ صحیح امیدواروں کا انتخاب نہیں کرسکے۔

پنجاب میں راہول اور پرینکا کی مہم مطلوبہ نتائج حاصل کرنے میں ناکام رہی۔ پارٹی نے لمحہ آخر میں درج فہرست ذاتوں سے تعلق رکھنے والے چرنجیت سنگھ چنی کو چیف منسٹر بنانے کا جو جوا کھیلا تھا‘ اس کے بہتر نتائج برآمد نہیں ہوئے۔ عام آدمی پارٹی بھاری اکثریت سے کامیابی کی طرف بڑھ رہی ہے۔

اجئے ماکن اور ہریش چودھری نے اس انتخابی مہم کے دوران پارٹی کے ارکان پارلیمنٹ کو نظرانداز کرتے ہوئے صورتِ حال کو مزید ابتر کردیا۔ اسی طرح النکر سوائی‘ کے راجو‘ بائجو اور کوشل ودیارتھی اوردیگر سیاسی مشیروں پر مشتمل راہول گاندھی کی ٹیم انتخابات میں ناکام رہی ہے۔ پرانے قائدین کو نظرانداز کردیا گیا ہے۔ اسی طرح سندیپ سنگھ‘ اجئے کمار للو اور مونا مشرا پر پرینکا گاندھی وڈرا کا انحصار انہیں لے ڈوبا۔

تبصرہ کریں

Back to top button