راہول گاندھی کا 6مئی کو دورہ ورنگل

اس سلسلہ میں بڑے پیمانہ پر تیاریاں تیزی کے ساتھ جاری ہیں۔ 7/ مئی کو راہول گاندھی حیدرآباد میں غیر سیاسی تنظیموں کے قائدین اور دانشوروں اور طلبا کے نمائندوں سے ملاقات کریں گے۔

حیدرآباد: سکریٹری اے آئی سی سی وانچارج تلنگانہ کانگریس امور مانیکم ٹیگور ایم پی نے آج سکریٹری اے آئی سی سی وانچارج بوس راجو اور دیگر قائدین کے ہمراہ ورنگل کے آرٹس کالج گراونڈ کا معائنہ کیا جہاں 6مئی کو راہول گاندھی کسان گرجنا کے جلسہ عام سے خطاب کرنے والے ہیں۔

معائنہ کے بعد بوس راجو نے بتایا کہ راہول گاندھی 6 اور7 مئی کو تلنگانہ کا 2روزہ دورہ کریں گے۔ 6مئی کو وہ ورنگل میں کسان گرجنا سے خطاب کرتے ہوئے ٹی آر ایس حکومت کی کسانوں کے مسائل کو حل کرنے میں ناکامیوں کو بے نقاب کریں گے۔

اس جلسہ میں کانگریس پارٹی کی جانب سے کسان ڈیکلریشن بھی جاری کیا جائے گا۔ اس سلسلہ میں بڑے پیمانہ پر تیاریاں تیزی کے ساتھ جاری ہیں۔ 7/ مئی کو راہول گاندھی حیدرآباد میں غیر سیاسی تنظیموں کے قائدین اور دانشوروں اور طلبا کے نمائندوں سے ملاقات کریں گے۔

تاہم اس سلسلہ میں پروگرام کو ایک دو روز میں قطعیت دی جائے گی۔ اس دوران کارگذار صدر مہیش کمار گوڑ نے بتایا کہ6مئی کو ورنگل میں کسان گرجنا میں راہول گاندھی کی شرکت تاریخی اہمیت کی حامل رہے گی۔ ورنگل سے کسانوں کے مسائل کے حل کیلئے باقاعدہ جدوجہد کا آغاز ہوگا۔

تلنگانہ ریاست کے قیام کے بعد7500 سے زائد کسانوں نے خودکشی کرلی ہے۔ راہول گاندھی 6مئی کو اپنے دورہ کے دوران متوفی کسانوں کے ارکان خاندان سے ملاقات کریں گے اور ان کے ساتھ لنچ بھی کریں گے۔

اے آئی سی سی پروگرام کمیٹی چیرمین مہیشور ریڈی نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت دلت اور قبائیلوں سے ان کی اراضیات زبردستی چھین رہی ہے۔ان افراد کو اندرا گاندھی کے دور حکومت میں اراضیات کا الاٹمنٹ کیا گیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس نے کسانوں کو ایک لاکھ روپیہ قرض کی معافی کا وعدہ آج تک پورا نہیں کیا۔ کانگریس پارٹی کسانوں سے ان کی فصلوں کو خرید نے تک اپنی جدوجہد جاری رہے گی۔

تبصرہ کریں

Back to top button