روس۔ یوکیرن سرحد پر بڑھتی کشیدگی، اقوام متحدہ میں ہندوستان کا اظہار تشویش

پیر کی رات سلامتی کونسل کی ایمرجنسی میٹنگ سے خطاب مں ی اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل نمائندہ ٹی ایس تری مورتی نے کہا کہ ہم نے یوکرین کی صورتِ حال پر نظر رکھی ہے۔

اقوام متحدہ: روس۔ یوکرین سرحد پر بڑھتی کشیدگی پر ”گہری تشویش“ظاہر کرتے ہوئے ہندوستان نے اقوام متحدہ سیکوریٹی کونسل سے کہا ہے کہ اولین ترجیح کشیدگی گھٹنا ہے۔ اس کے لئے تمام ممالک کے ”جائز“ سیکوریٹی مفادات کو ملحوظ رکھا جائے۔ پیر کی رات سلامتی کونسل کی ایمرجنسی میٹنگ سے خطاب مں ی اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل نمائندہ ٹی ایس تری مورتی نے کہا کہ ہم نے یوکرین کی صورتِ حال پر نظر رکھی ہے۔

واضح رہے کہ یوکرین میں اقوام متحدہ (یو این) نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل (یو این ایس یو پی) کے اجلاس میں یہاں روس کے مشرقی سیکٹر میں فوجیوں کی تعیناتی کے اقدام پر اعتراض کرتے ہوئے کہا ہے کہ معاملے کو حل کرنے کا واحد راستہ بات چیت ہے۔ یوکرین میں علیحدگی پسند علاقوں کو روس کی جانب سے آزاد تسلیم کرنے اور اپنے فوجیوں کوپیس کیپرس کے طور پر تعینات کرنے کے بعدامریکہ اور اس کے اتحادیوں کی درخواست پر پیر کویہ اجلاس منعقد ہوا تھا۔

یواین ایس یو پی میں خطاب کرتے ہوئے اقوام متحدہ کی سیاسی اور امن سازی کی سربراہ روزمیری اے ڈیکارلو نے کہا کہ ڈونیٹسک اور لوہانسک کے کچھ علاقوں کو آزاد قرار دینے والا روس کا فیصلہ "یوکرین کی سالمیت اور خودمختاری کی خلاف ورزی ہے۔”

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button