روس نے یوکرین میں ہر جگہ بارودی سرنگیں چھوڑی ہیں: ولادیمیر زیلنسکی

زیلنسکی نے کہاکہ ہمارے ملک کے شمالی علاقوں میں سکیورٹی کا کام جاری ہے، جہاں سے روسی فوجیوں کو نکال دیا گیا ہے۔ سب سے پہلے بارودی سرنگوں کو ہٹایا جا رہا ہے۔ روسی فوج اپنے پیچھے لاکھوں خطرناک اشیاء چھوڑ گئی ہے۔

کیف: یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے دعویٰ کیا ہے کہ حملہ آور روسی فوجیوں نے ملک کے شمالی علاقوں میں گھروں، کھیتوں اور سڑکوں سمیت ہر جگہ بارودی سرنگیں چھوڑ دی ہیں۔ زیلنسکی نے پیر کی دیر رات اپنے خطاب میں روسی فوجیوں پر ٹرپ وائر سرنگوں سمیت بڑی تعداد میں خطرناک اشیاء چھوڑنے کا الزام لگایا۔

 انہوں نے کہاکہ ہمارے ملک کے شمالی علاقوں میں سکیورٹی کا کام جاری ہے، جہاں سے روسی فوجیوں کو نکال دیا گیا ہے۔ سب سے پہلے بارودی سرنگوں کو ہٹایا جا رہا ہے۔ روسی فوج اپنے پیچھے لاکھوں خطرناک اشیاء چھوڑ گئی ہے۔ یہ وہ گولے ہیں جو پھٹے نہیں، بارودی سرنگیں ہیں، ٹرپ وائر بارودی سرنگیں ہیں۔”

انہوں نے کہا کہ یوکرین کے فوجی روزانہ ان اشیاء کو ٹھکانے لگا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ "حملہ آوروں نے ہر جگہ بارودی سرنگیں بچھا دی ہیں۔ انہوں نے لوگوں کی املاک، کاروں اور یہاں تک کہ دروازوں میں بھی بارودی سرنگیں بچھا دی ہیں۔

یوکرینی صدر نے یہ بھی کہا کہ روس کے اقدامات کی وجہ سے یوکرین اب دنیا میں بارودی سرنگوں سے سب سے زیادہ متاثرہ ممالک میں سے ایک ہے۔ انہوں نے عالمی برادری سے اسے روسی فوجیوں کا جنگی جرم شمار کرنے کی اپیل کی۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button