سراج کو ممبئی ٹسٹ میں شامل کرنے جعفر کی تائید

جعفر نے مزید کہا کہ مینک اگروال جنہوں نے جملہ 30 (13 اور17)رن بنائے ہیں جب کانپور ٹسٹ کھیلا گیا تھا۔انہیں وقفہ دینا چاہئے۔باقی تمام کھلاڑیوں کو اسی مقام پر کھیلنے دیا جائے۔

ممبئی: ہندوستان کے سابق کرکٹر وسیم جعفر نے نیوزی لینڈ کے خلاف 3دسمبر سے ممبئی کے وانکھیڑے اسٹیڈیم میں شروع ہونے والے دوسرے ٹسٹ میں ایشانت شرما کہ جگہ محمد سراج کو شامل کرنے کی تائید کی ہے۔ایشانت شرما کانپور کے گرین پارک پر کھیلے گئے افتتاحی ٹسٹ میں کوئی بھی وکٹ نہیں لے سکے۔

طویل القامت بالر 22اوورس میں کوئی اثر ڈالنے میں ناکام رہے جبکہ یہ ٹسٹ ڈرا رہا۔اگر (وانکھیڑے) میں کچھ تھوڑی مدد مل سکتی ہے تو آپ تین سیمرس کو کھیلتے دیکھ سکتے ہیں۔

تین سیمرس اور دو اسپینرس کا امتزاج ہوسکتا ہے۔اگر موسم خشک رہا تو ایسے میں اسپین بولنگ شاید میرے خیال میں کام آسکتی ہے اور ایشانت کی جگہ سراج کو لیا جا سکتا ہے۔یہ خیال جعفر نے چہارشنبہ کو ظاہر کیا۔امیش (یادو) سراج اور 3 اسپینرس ہندوستان کا امتزاج ہونا چاہئے۔جب یہ دوسرا ٹسٹ کھیلا جائے گا۔

جعفر نے یہ بھی کہاکہ ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی)سلکشن کمیٹی کو نہیں چاہئے کہ وہ ٹاپ آرڈر بیاٹرس اجنکے رہا نے اور چھتیشور پجارا کو جنوبی افریقہ کے اہم دورے سے خارج نہیں کیا جانا چاہئے۔ قائم مقام کپتان کانپور رہا نے اور پجارا کا دورہ غیر موثر رہا۔حالانکہ شریاس ایر نے ٹسٹ ڈبیو کیا تھا اور بہترین مظاہرہ کے ذریعہ سنچری اور نصف سنچری اسکور کی۔

لیکن جعفر کا کہنا ہے کہ قد آور کھلاڑیوں کو جنوبی افریقہ کے خلاف تین ٹسٹ میاچس کی سیریز سے قبل خارج کرنا مناسب نہیں ہوگا۔ میں رہانا کو خارج نہیں کرنا چاہتا کیونکہ ایک بڑی سیریز جنوبی افریقہ میں کھیلنی ہے۔میں رہانا یہاں تک پجارا کے تعلق سے یہ خیال کرتا ہوں کہ ان کے تعلق سے جنوبی افریقی سیریز تک بحث کیلئے انتظار کرنا ہوگا جیسے ہی یہ سیریز شروع ہوگی تب آپ دونوں کھلاڑیوں کو طلب کرسکتے ہیں۔

لیکن یقینی طورپر جنوبی افریقہ کو رہانے اور پجارا کو لیجانا چاہئے۔کیونکہ یہ اہم سیریز ہوگی۔جعفر نے مزید کہا کہ مینک اگروال جنہوں نے جملہ 30 (13 اور17)رن بنائے ہیں جب کانپور ٹسٹ کھیلا گیا تھا۔انہیں وقفہ دینا چاہئے۔باقی تمام کھلاڑیوں کو اسی مقام پر کھیلنے دیا جائے۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button