آئی ایس آئی ایس کے سابق رکن کی ضمانت کے خلاف این آئی اے کی اپیل خارج

جسٹس ایس عبدالنذیر اور جسٹس کرشن مرار کی بینچ نے بامبے ہائی کورٹ کے اس حکم کو برقرار رکھا، جس کے تحت اس نے مجید کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا تھا۔

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے مبینہ طور پر آئی ایس آئی ایس میں شامل ہونے کے بعد وطن واپس ہونے والے ممبئی کے اریب مجید کی ضمانت کے خلاف قومی تفتیشی ایجنسی (این آئی اے) کی اپیل کی شنوائی سے جمعہ کے روز انکار کر دیا۔

جسٹس ایس عبدالنذیر اور جسٹس کرشن مرار کی بینچ نے بامبے ہائی کورٹ کے اس حکم کو برقرار رکھا، جس کے تحت اس نے مجید کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا تھا۔

مجید کے خلاف الزام ہے کہ وہ سیریا میں آئی ایس آئی ایس سے وابستہ تھا۔ وہاں سے لوٹنے کے بعد وہ غیرقانونی سرگرمیوں کی روک تھام کے قانون (یو اے پی اے) اور تعذیرات ہند کی دفعہ 125 کے تحت مقدمہ چلایا جا رہا ہے۔

غور طلب ہے کہ این آئی اے کی خصوصی عدالت نے 17 مارچ 2020 کو مجید کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا تھا جس کے خلاف این آئی اے ہائی کورٹ گئی جس نے اپیل خارج کر دی تھی۔ اس کے بعد تفتیشی ایجنسی نے سپریم کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا تھا لیکن یہاں سے بھی اسے مایوسی ہاتھ آئی۔

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.