بہار میں 2 بچوں کے بینک کھاتوں میں کروڑہا روپے منتقل

یہ واقعہ کٹیہار ضلع میں پیش آیا جب جماعت ششم کے دو طلباء آشیش کمار اور گروچرن بسواس کو 15/ستمبر کو اپنے بینک کھاتوں میں 6,20,11,100 اور 90,52,21,223 کروڑ روپئے وصول ہوئے۔

پٹنہ: دو بچوں کے بینک کھاتوں میں کروڑ روپیوں کی منتقلی پر بہار کے عوام حیران رہ گئے۔

یہ واقعہ کٹیہار ضلع میں پیش آیا جب جماعت ششم کے دو طلباء آشیش کمار اور گروچرن بسواس کو 15/ستمبر کو اپنے بینک کھاتوں میں 6,20,11,100 اور 90,52,21,223 کروڑ روپئے وصول ہوئے۔

دونوں بچوں کا تعلق باگاہورہ پنچایت کے پسٹیا موضع سے ہے۔ ان کے کھاتے اتربہار گرامین بینک میں ہیں۔

کٹیہار کے ضلع مجسٹریٹ ادیان مشرا نے بھی بچوں کے کھاتوں میں بھاری رقومات جمع ہونے کی توثیق کی۔

مشرا نے کہا کہ دونوں بچوں کے کھاتوں میں بڑی رقومات جمع کی گئیں۔ یہ رقم منی اسٹیٹمنٹس میں دیکھی جاسکتی ہیں۔

بینک کے سینئر عہدیداروں کو مطلع کیا جارہا ہے۔“ اتر بہار گرامین بینک کے ایل ڈی ایم کے مدھوکر نے کہا کہ دو بچوں کے کھاتوں میں رقم کی منتقلی کے بارے میں ہمیں جیسے ہی علم ہوا ہم نے ان کے کھاتے منجمد کردیے اور رقم نکاسی روک دی۔

بچوں کے والدین بھی ان  رقومات کے ذریعہ سے متعلق کچھ بتانے سے قاصر ہیں۔ اب ہم بھیجنے والے کا پتا لگانے معاملے کی تحقیقات کررہے ہیں۔

“ قبل ازیں بہارکے گھگاریہ ضلع کے ہی رنجیت داس نامی شخص کے اتربہار گرامین بینک کے کھاتے میں 5.5لاکھ روپئے منتقل ہوئے تھے۔

داس نے یہ دعویٰ کرتے ہوئے یہ رقم بینک کو واپس کرنے سے انکار کردیا کہ وزیراعظم نریندر مودی نے ہر شہری کے بینک کھاتے میں 15لاکھ روپئے جمع کرنے کا وعدہ کیا تھا اور اسے اس کی پہلی قسط وصول ہوئی۔

داس نے مزید کہا کہ اس نے وہ رقم خرچ کردی۔ اب وہ رقم واپس کرنے سے قاصر ہے۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.