حرمین شریفین میں کل سے صد فیصد گنجائش کی بحالی

ابتدائی جاری کردہ پروٹوکولس کے مطابق مسجدالحرام اورمسجد نبوی ؐ میں مکمل گنجائش بحال کردی جائے گی۔

ریاض: وزارت داخلہ نے آج اعلان کیاکہ حرمین شریفین میں مکمل گنجائش اتوار11۔ ربیع الاول1443ھ مطابق17۔ اکتوبر 2021ء سے بحال ہوجائے گی۔

ابتدائی جاری کردہ پروٹوکولس کے مطابق مسجدالحرام اورمسجد نبوی ؐ میں مکمل گنجائش بحال کردی جائے گی۔ مزید یہ کہ حرمین شریفین تک رسائی کو12سال اوراس سے زائد عمرکے افرادکیلئے جنہوں نے مکمل ٹیکہ اندازی سے استفادہ کیاہے،محدودکردیاجائے گا۔

علاوہ ازیں مسجدالحرام اورمسجدنبویؐ کے اندر تمام اوقات میں ماسک کااستعمال لازمی رہے گا۔ اس کے علاوہ توکلناکے ذریعہ نماز‘عمرہ، زیارات وغیرہ کیلئے اجازت ناموں کاحصول لازم رہے گا۔

وزارت کی جانب سے سعودی پریس ایجنسی کے ذریعہ جاری کئے جانے والے بیان میں بتایاگیاکہ عام مقامات جیسے ریسٹورنٹس، سینماگھروں پرسماجی دوری کے اقدامات کو منسوخ کردیاجائے گا اور ٹرانسپورٹ کودوٹیکے لینے والے افرادکیلئے مکمل گنجائش کے ساتھ چلانے کی اجازت رہے گی۔

شادیاں بھی مہمانوں کی تعداد پرکوئی تحدیدات کے بغیرانجام دینے کی اجازت دی جائے گی۔ حکومت ان افراد کیلئے جودوٹیکے لئے ہوں سلطنت کے مکہ معظمہ اورمدینہ منورہ میں واقع حرمین شریفین میں سماجی دوری کے اقدامات کوبرخاست کردے گی اورمکمل گنجائش کے ساتھ حاضری کی اجازت دے گی۔

حاضررہنے والوں اورملازمین کیلئے ضروری رہے گاکہ وہ حرمین شریفین کے صحن میں ماسک پہنیں اورکووڈٹریکرایپ توکلنا استعمال کرتے ہوئے یہ معلوم کریں کہ وہ کب حاضرہوسکتے ہیں۔ مکمل ٹیکہ اندازی سے استفادہ کرنے والے سعودی عرب کے شہریوں کے علاوہ سلطنت میں سکونت پذیر افراد کیلئے کھلے مقامات پر ماسک پہننے کی ضرورت نہیں رہے گی۔

تاہم حکام نے بتایاکہ اگرکوروناکیسس میں دوبارہ اضافہ ہوگیایہ قواعد بدل سکتے ہیں۔ سعودی عرب میں کم ازکم 44374451افراد کووڈ19کے ٹیکہ کی خوراکیں لئے ہیں۔ سلطنت نے استعمال کیلئے ماڈرنا، فائزر/ بائیواین ٹیک اورآسٹرازینکا ٹیکوں کی منظوری دی ہے۔ جولائی کے دوران دوسری لہر آنے کے بعد سے کوروناکیسس میں تیزی کے ساتھ کمی ہورہی ہے۔

وباء کے مارچ 2020میں آغاز کے وقت سے زائداز 540000کیسس کااندراج عمل میں آیاہے اور8758اموات واقع ہوئی ہیں۔ خادم حرمین شریفین شاہ سلمان نے مارچ 2020کے دوران کوروناوائرس کی وباء پھوٹ پڑنے کے باعث تقریباً19ماہ قبل عائدکردہ کووڈ19 تحدیدات میں مزیدنرمی و رعایت کے ایک حصہ کے طورپرجو فیصلے کئے اورجن کے بارے میں وزارت داخلہ نے آج اعلان کیاہے ان میں یہ بھی شامل ہے کہ عوام کو ماسک پہنے بغیرآوٹ ڈور جانے کی اجازت رہے گی اوران کے لئے یہ بھی ضروری نہیں رہے گاکہ وہ سماجی دوری اختیارکریں۔

تاہم عوام کوگھروں اوردفاتر وغیرہ کے اندر ماسک پہننا لازمی رہے گا۔ یہ بھی فیصلہ کیاگیاہے کہ کمرشیل آوٹ لیٹس کومکمل گنجائش کے ساتھ چلانے کی اجازت دی جائے لیکن عوام کے لئے ہنوزماسک پہننا ضروری رہے گا۔ کمرشیل آوٹ لیٹس میں سماجی دوری کے قواعد کواب برخاست کردیاجارہاہے۔ وزارت داخلہ کے ترجمان نے بتایاکہ شاہ نے ان نئے فیصلوں کی منظوری محکمہ صحت کے عہدیداروں کی سفارشات اورسلطنت میں کوروناکیسس میں کافی کمی کے پیش نظرکئے ہیں۔

ذریعہ
ایجنسیز

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.