گائے کے دودھ میں سونا ہے:دلیپ گھوش بی جے پی لیڈر

ایک میٹنگ میں دلیپ گھوش نے دعوی کیاتھا کہ ’’گائے کے دودھ میں سونا ہوتا ہے۔ اسی لیے دودھ کا رنگ پیلا ہوتا ہے۔ جب سورج چمکتا ہے تو اس سے سونا بنایا جاسکتا ہے‘‘۔

کولکتہ: متنازعہ اور حیرت انگیز بیانات دینے کےلئے مشہور ریاستی بی جے پی کے صدر دلیپ گھوش نے اب دعویٰ کیا ہے کہ گائے کے دودھ میں سونا ہوتا ہے ۔تاہم انہوں نے اپنے اس دعوی کے ثبوت میں کچھ بھی پیش نہیں کیا ہے۔تاہم سوشل میڈیا پر ان کے اس دعوے پر مذاق اڑایا جارہاہے۔

ایک میٹنگ میں انہوں نے دعوی کیاتھا کہ ’’گائے کے دودھ میں سونا ہوتا ہے۔ اسی لیے دودھ کا رنگ پیلا ہوتا ہے۔ جب سورج چمکتا ہے تو اس سے سونا بنایا جاسکتا ہے‘‘۔ اس بیان کے بعد ہی بی جے پی کے ریاستی صدر کو سوشل میڈیا پر بھی شدید تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔ایک دن بعد آج ایک بار پھر پریس کانفرنس کرنے کےللئے پہنچنے دلیپ گھوش نے کہا کہ وہ اپنے اس بیا ن پر قائم ہیں ۔

جمعہ کو بی جے پی کے ریاستی دفتر میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے دلیپ گھوش نے کہا کہ کلکتہ یا اس سے ملحقہ اضلاع میں گائے پالنے کا رواج مکمل طور پر ختم ہوچکا ہے ۔ہم دودھ کے پیکٹ کھا رہے ہیں۔ میں نے کہا کہ سونا دودھ میں پایا جاتا ہے۔ بہت سے لوگوں نے اس کی مخالفت کی ہے ، لیکن جنہوں نے اصلی دودھ نہیں کھایا وہ سونا کیسے حاصل کریں گے؟

ماہرین حیوانات نے اس کے دعوے کی دھجیاں اڑا تے کہا ہے کہ یہ غیر سائنسی بات ہے۔ترنمول کانگریس نے کہا کہ گھوش کی باتوں کی کوئی اہمیت نہیں ہوتی ہے اور نہ ہی کوئی سیریس لیتا ہے ۔
دلیپ گھوش کے ریمارکس پر تبصرہ کرتے ہوئے ریاستی وزیر ٹرانسپورٹ فرہاد حکیم نے کہا کہ ’’ اگر دلیپ بابو کو حقیقی گائے مل سکتی ہے تو اس پر تحقیق ہوگی ‘‘۔

خیال رہے کہ دودن قبل ہی دلیپ گھوش نے بردوان میں ایک گوپالک سمیتی کی میٹنگ میںکہا تھا کہ ’’گائے کے دودھ میں سنہری حصہ ہے۔ تو دودھ زرد ہے۔ دیسی گائے کی جھونپڑی میں سنہری ڈوری ہے۔ جب سورج اس پر چمکتا ہے تو سونا بن جاتا ہے۔ اس دن دلیپ بابو نے وضاحت کی ،6 چیزیں ایمان سے ملتی ہیں۔

خیال رہے کہ تین سال قبل گجرات میں جوناگڑھ زرعی یونیورسٹی کے کچھ ماہرین نے 400 گایوں کا سروے کرنے کے بعد دعویٰ کیا تھا کہ گائے کے گوبر میں سوناکے ذرات پائے گئے ہیں۔ یونیورسٹی میں بائیو ٹیکنالوجی اور بائیو کیمسٹری شعبہ کے سربراہ بی اے گولکیا نے دعویٰ کیا تھا کہ ’’ہم نے مویشیوں کی چھ نسلوں کے 100 سے زائد گائوں کے پیشاب کے نمونوں کی جانچ کی ہے اوراس میں سونا پایا ہے۔یہ سونا کلورائیڈ مرکبات کی شکل میں ہے۔ اس سوال پر کہ کیا گائے کے دود ھ میں بھی سونا ہے ؟۔گولکیا نے جواب دیا کہ ہم صرف گائے کے پیشاب کے بارے میں بات کر سکتے ہیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.