سینا بھون کے سامنے ہنومان چالیسہ‘ ایم این ایس قائد اور ڈرائیور زیرحراست

مہاراشٹرا نونرمان سینا سربراہ نے ریاستی حکومت سے کہاتھا کہ وہ مساجد سے لاؤڈاسپیکرس ہٹادے ورنہ وہ مسجدوں کے سامنے لاؤڈ اسپیکرس لگاکر ہنومان چالیسہ بجائیں گے۔

ممبئی: ممبئی پولیس نے اتوار کے دن مہاراشٹرا نونرمان سینا(ایم این ایس) کے ایک قائد اور ایک ٹیکسی ڈرائیور کو شہر میں شیوسینا ہیڈکوارٹرس (سینابھون‘ دادرکبوترخانہ) کے سامنے ہنومان چالیسہ بجانے کے سلسلہ میں حراست میں لے لیا۔

راج ٹھاکرے کی پارٹی نے اذاں کے خلاف بطوراحتجاج رام نومی کے موقع پر سینابھون کے سامنے ہنومان چالیسہ بجانے کا اعلان کیاتھا۔

ممبئی پولیس نے ہنومان چالیسہ کو روک دیا جو ٹیکسی پر لگے لاؤڈاسپیکر سے بجایاجارہاتھا۔ اس نے ایم این ایس قائد یشونت قلعہ دار اور ٹیکسی ڈرائیور کو حراست میں لے لیا۔ دونوں سے پوچھ تاچھ جاری ہے لیکن ابھی تک کوئی کیس درج نہیں کیاگیا ہے۔

اذاں تنازعہ کرناٹک سے مہاراشٹرا پہنچ گیاتھا۔

ایم این ایس سربراہ نے ریاستی حکومت سے کہاتھا کہ وہ مساجد سے لاؤڈاسپیکرس ہٹادے ورنہ وہ مسجدوں کے سامنے لاؤڈ اسپیکرس لگاکر ہنومان چالیسہ بجائیں گے۔

انہوں نے حکومت مہاراشٹرا کو خبردارکیاتھا۔ راج ٹھاکرے کے اس موقف پرخود ان کی پارٹی میں شامل مسلمان ناراض ہوگئے۔

تبصرہ کریں

Back to top button