سی پی آئی ایم ورکر کے قتل کا ملزم آر ایس ایس کارکن گرفتار

شمالی کیرالا کے اِس ضلع میں برسراقتدار جماعت سی پی آئی ایم کے ایک ورکر کے قتل کے ملزم کو جو آر ایس ایس کا ورکر ہے‘ گرفتار کرلیا گیا۔

کنّور : شمالی کیرالا کے اِس ضلع میں برسراقتدار جماعت سی پی آئی ایم کے ایک ورکر کے قتل کے ملزم کو جو آر ایس ایس کا ورکر ہے‘ گرفتار کرلیا گیا۔

وہ چیف منسٹر پی وجین کے مکان کے قریب ایک این آر آئی کے بند مکان میں چھپا ہوا تھا۔ پولیس نے جمعہ کے دن 38 سالہ نجل داس کو جو سی پی آئی ایم کارکن پی ہری داسن کے قتل کا ملزم ہے‘ پرشانت نامی شخص کے مکان سے گرفتار کیا جو کسی خلیجی ملک میں کام کررہا ہے۔

پرشانت‘ سی پی آئی ایم کا سابق ہمدرد بتایا جاتا ہے۔ اس کی بیوی ریشما کو بھی جو ہائر سکنڈری اسکول ٹیچر ہے اور نجل داس کی دوست ہے‘ گرفتار کرلیا گیا۔ اس کی گرفتاری‘ قتل کے ملزم کو مکان میں پناہ دینے کے جرم میں ہوئی۔

ریشما‘ شوہر کے بیرون ِ ملک جانے کے بعد سے دوسرے مکان میں رہ رہی ہے اور پہلا مکان بند پڑا ہے۔ پولیس کے بموجب فروری میں سی پی آئی ایم ورکر کے قتل کے بعد سے نجل داس فرار تھا۔ وہ ٹھکانے بدل رہا تھا اور 17 اپریل سے ریشما کے فراہم کردہ مکان میں چھپا ہوا تھا۔

گرفتاری کی خبر آنے کے بعد مکان پر کل رات دیسی ساختہ بم پھینکے گئے۔ اپنے گڑھ میں اور وہ بھی چیف منسٹر کے مکان کے قریب آر ایس ایس ورکر کے چھپے رہنے کی خبر نے مقامی سی پی آئی ایم کارکنوں کو چونکا دیا۔

تبصرہ کریں

Back to top button