شام کو انسانی امداد کی ترسیل ممکن بنانے کیلئے فیصلہ کیا جائے:انٹونیو گٹریس

سیکرٹری جنرل کی نائب ترجمان فرحان حق نے کہا کہ گوٹیریس نے سلامتی کونسل سے مطالبہ کیا کہ وہ براستہ ترکی شام میں انسانی امداد کی ترسیل کے اختیار کو بڑھانے کے لیے معاہدہ قائم کرے۔

نیویارک: اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوٹریس  نے شام کو امداد کی فراہمی کے معاملے میں  اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں مصالحت قائم کرنے کی اپیل کی ہے۔نیویارک میں اقوام متحدہ کے ہیڈ کوارٹر میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس میں سیکرٹری جنرل کینائب  ترجمان فرحان حق نے کہا کہ گوٹیریس نے سلامتی کونسل سے مطالبہ کیا کہ وہ  براستہ ترکی شام میں انسانی امداد کی ترسیل کے اختیار کو بڑھانے کے لیے  معاہدہ قائم کرے۔

انہوں نے بتایا کہ ہم  سلامتی  کونسل کے ارکان کے مابین  شام کو امداد کی ترسیل کے اختیارات میں  توسیع کے بارے میں جاری   بحث کو نتیجہ خیز بنانے کے بڑی بے صبری سے منتظر ہیں۔  ارکان کے درمیان  مفاہمت  شام  کے لاکھوں شہریوں کی زندگیوں کو بچانے والی امداد کی ترسیل کے لیے حد درجے اہمیت کی حامل ہے۔

فرحان حق نے  سلامتی کونسل کے ارکان  کے ساتھ اس سے قبل کی نشست میں 10 جولائی کومیعاد پوری ہونے والے  اختیارات کی توسیع کے شام کو انسانی امداد کے دوام کی اہمیت کو بیان کرنے کی یاد دہانی بھی کرائی۔سلامتی کونسل میں فیصلے کے لیے  روس، چین، متحدہ امریکہ، فرانس اور برطانیہ سب کی بیک وقت  منظوری لازمی ہے۔

اگر پانچ مستقل ارکان میں سے کسی ایک  کیویٹو کر نے کی صورت میں  کوئی  فیصلہ نہیں کیا جا سکتا۔جمعہ کو سلامتی کونسل کے اجلاس میں روس کے ویٹو کی وجہ سے شام کو سرحد پار سے امداد پر عمل درآمد گزشتہ اتوار کو ختم ہو گیا تھا۔

تبصرہ کریں

Back to top button