ضلع ورنگل میں انتہائی عصری سرکاری اسپتال کی تعمیر

یہ عصری اسپتال 1100 کروڑ روپئے کے صرفہ سے 15ایکڑ اراضی پر تعمیر کیا جائے گا۔ اس عمارت کے 24فلورس ہوں گے۔ غریبوں کو کارپوریٹ طرز کی علاج کی سہولت فراہم کرنا اس کا اہم مقصد ہے۔

حیدرآباد: تلنگانہ کے ضلع ورنگل میں سوپر اسپیشالٹی ہاسپٹل کی تعمیر کی جائے گی جس کے سلسلہ میں حکومت نے حال ہی میں فنڈس کی انتظامی منظوری دے دی ہے۔

یہ عصری اسپتال 1100 کروڑروپئے کے صرفہ سے 15ایکڑاراضی پر تعمیر کیاجائے گا۔ اس عمارت کے 24فلورس ہوں گے۔غریبوں کو کارپوریٹ طرز کی علاج کی سہولت فراہم کرنا اس کا اہم مقصد ہے۔

اس اسپتال میں ہیلی ایمبولنس سروس بھی دستیاب کروائی جائے گی۔اسپتال کی یہ عمارت مکمل طورپر ماحول دوست ہوگی۔حکومت نے رقم کی انتظامی منظوری کے لئے جی او158جاری کیا ہے۔

ان میں سیول کاموں کے لئے 509کروڑروپئے الاٹ کئے گئے ہیں۔صاف پانی، سینی ٹیشن کے لئے 20.36کروڑروپئے، میکانیکل، بجلی، پلمبنگ کے کاموں کے لئے 182.18کروڑروپئے،طبی آلات کے لئے105کروڑروپئے،ذیلی کاموں کے لئے54.28کروڑروپئے،بقیہ کاموں کے لئے229.18کروڑروپئے شامل ہیں۔

متعلقہ محکمہ جات کو وزیراعلی نے ہدایت دی ہے کہ اس سلسلہ میں تمام کام جلد مکمل کئے جائیں۔ورنگل میں انتہائی عصری طبی سہولیات،سوپر اسپیشلٹی خدمات کے ساتھ ہیلت سٹی کی تعمیر کے لئے 215.35ایکڑ اراضی الاٹ کی گئی ہے۔

ان میں 15ایکڑپر1100کروڑروپئے کے ساتھ سوپر اسپیشلٹی اسپتال کی تعمیر کے لئے فنڈس جاری کرنے کے سرکاری احکام جاری کئے گئے ہیں۔24منزلہ اسپتال کی عمارت میں دوہزار بستروں کی گنجائش رہے گی۔

ان میں جنرل سرجری،ای این ٹی سمیت،ڈرماٹولوجی، آرتھوپیڈک سہولیات والے 1200 بسترالاٹ کئے جائیں گے۔آنکالوجی، نیورولوجی،نیوروسرجری،پیڈیاٹرک سرجری،کارڈیالوجی،گیسٹروانٹرولوجی،یورولوجی،نفرالوجی سمیت دیگر طبی خدمات کے لئے 800بسترہوں گے۔

کیموتھراپی، ریڈیشن کی سہولیات کے ساتھ انتہائی عصری کینسرسنٹر کا بھی قیام عمل میں لایاجائے گا۔ساتھ ہی میڈیکل طلبہ کے لئے ڈینٹل کالج بھی قائم کیاجائے گا۔اس اسپتال کی تعمیر کے بعد ضلع ورنگل میں قائم سرکاری اسپتالوں کے بوجھ میں کمی واقع ہوگی۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button