ضلع پلوامہ میں سخت سیکوریٹی

جموں وکشمیر کے ضلع پلوامہ میں 16 گھنٹوں کے دوران 4 غیر مقامی شہریوں پر فائرنگ کے بعد ضلع بھر میں سیکوریٹی الرٹ جاری کیا گیا ہے۔

سری نگر: جموں وکشمیر کے ضلع پلوامہ میں 16 گھنٹوں کے دوران 4 غیر مقامی شہریوں پر فائرنگ کے بعد ضلع بھر میں سیکوریٹی الرٹ جاری کیا گیا ہے۔

معلوم ہوا ہے کہ ضلع کے قرب و جوار بالخصوص حساس چوکیوں میں سیکوریٹی بندوبست کو مزید سخت کردیا گیا ہے۔پلوامہ میں جہاں ناکوں کے جال کو مزید توسیع دی گئی ہے وہیں حساس مقامات پر سیکوریٹی کی نفری میں بھی اضافہ کیا گیا ہے اور انہیں مزید چوکنا بھی رکھا گیا ہے۔

یو این آئی اردو کے ایک نامہ نگار نے مختلف علاقوں کا دورہ کرنے کے بعد بتایا کہ پلوامہ میں سیکوریٹی بندوبست کو مزید سخت کر دیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ بعض مقامات پر سیکوریٹی فورسس اہلکار‘ اسکوٹر سواروں کو روک کر ان کے بیاگوں کی تلاشی کرنے کے بعد انہیں دیوار کے ساتھ کھڑا کر کے مشین سے ان کے جسم کو بھی چیک کرتے تھے۔

نامہ نگار نے کہا کہ سیکوریٹی فورسس اہلکار مشکوک نظر آنے والے راہگیروں کو بھی روک کر ان کی جامہ تلاشی اور ان کے شناختی کارڈ چیک کرنے کے بعد انہیں اپنی منزلوں کی طرف جانے کی اجازت دیتے تھے۔

ذرائع نے بتایاکہ جنوبی کشمیر کے دیگر 3 اضلاع شوپیاں‘اننت ناگ اور کلگام میں بھی سیکوریٹی فورسس کو چوبیس گھنٹے مستعد رہنے کے احکامات صادر کئے گئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ عسکریت پسندوں کے منصوبوں کو ناکام بنانے کی خاطر جنوبی کشمیر میں عسکریت پسند مخالف آپریشنس میں شدت لانے کے بھی احکامات صادر کئے گئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق 4 غیر مقامی شہریوں پر فائرنگ کے بعد ضلع پلوامہ میں سیکوریٹی صورت حال کا بھی از سر نو جائزہ لیا جارہا ہے جبکہ عسکریت پسندوں اور اُن کے مدد گاروں کی بڑے پیمانے پر تلاش شروع کی گئی ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button